امریکہ کی جانب سے عالمی صنعتی چین اور سپلائی چین کی تباہی غیر مقبول ہے: چینی وزارت خارجہ

امریکہ کی جانب سے عالمی صنعتی چین اور سپلائی چین کی تباہی غیر مقبول ہے: چینی وزارت خارجہ

امریکی کاروباری برادری نے حال ہی میں کہا کہ “نیشنل ڈیفنس اتھارائزیشن ایکٹ” میں چینی چپ مینوفیکچررز کے ساتھ کاروبار کرنے پر پابندی عائد کرنے کی کوئی قانونی بنیاد نہیں ہے۔

اس کے تناظر میں چین کی وزارت خارجہ کی ترجمان ماو نینگ نے پچیس تاریخ کو معمول کی پریس کانفرنس میں کہا کہ امریکی کاروباری برادری کی آواز سے ظاہر ہوتا ہے کہ عالمی صنعتی چین اور سپلائی چین کو جان بوجھ کر خراب  کرنا کسی بھی فریق کے مفاد میں نہیں اور یہ غیر مقبول ہے۔

ماو نینگ نے کہا کہ عالمی صنعتی چین اور سپلائی چین کی تشکیل اور ترقی، مارکیٹ کے قوانین اور انٹرپرائز کے انتخاب کی مشترکہ کارروائی کا نتیجہ ہے. امریکہ کو اندرون ملک کاروباری طبقے کی آواز کو غور سے سننا چاہیئے اور معاشی، تجارتی، سائنسی اور تکنیکی امور کو سیاسی رنگ دینے اور اسے ہتھیار کے طور پر استعمال کرنے سے گریز کرنا چاہیئے۔

انہوں نے امریکہ سے مطالبہ کیا کہ چینی کاروباری اداروں کو بدنیتی کے اس انداز سے روکنا اور دبانا بند کرے۔ مارکیٹ  کی معیشت اور آزاد تجارت کے قوانین کا احترام کرے اور عالمی صنعتی چین اور سپلائی چین کے تحفظ اور استحکام کو برقرار رکھے۔

یہ خبر پڑھیئے

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی الوداعی ملاقات

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے …

Show Buttons
Hide Buttons