تازہ ترین

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں متعدد ممالک کی جانب سے امریکی بالادستی کی مذمت

حالیہ دنوں میں اقوام متحدہ کی 77ویں جنرل اسمبلی کے عمومی مباحثے میں اپنی تقاریر میں کئی ممالک کے رہنماؤں نے امریکہ کی بالادستی، دوسرے ممالک کے معاملات میں بے جا مداخلت اور یکطرفہ پابندیوں کی مذمت کی ہے، جس نے  متعلقہ ممالک کی سماجی ترقی اور اقتصادیات کو شدید نقصان پہنچایا ہے۔

بولیویا کے صدر لوئز آلبرٹو  نےکہا کہ ہم اپنےملک میں کسی بھی قسم کی غیرملکی مداخلت اور جمہوریت اور استحکام کو نقصان پہنچانے کی کسی بھی کوشش کی مخالفت کرتے ہیں۔ جیسا کہ ایک امریکی فوجی اہلکار نے چند ماہ قبل کہا تھا کہ امریکہ “لیتھیم مثلث” کے علاقے کو نشانہ بنا رہا ہے جہاں بولیویا، ارجنٹائن اور چلی کی سرحدیں آپس میں ملتی ہیں۔ وہ ہماری لیتھیم کی کانوں کو کنٹرول کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی نے کہا کہ  2015 میں ہم نے ایران جوہری معاہدے پر دستخط کیے اور اپنے وعدے پورے کیے لیکن امریکہ نے اسے پامال کیا۔ امریکہ نے ایران کے خلاف انتہائی جابرانہ اقدامات کا نفاذ کیا ہے۔ امریکہ کی طرف سے ایرانی عوام پر پابندیاں لگائی گئی تھیں اور یہ پابندیاں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والا ہتھیار ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

راولپنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز، پاکستان نے 181 رنز بنالیے

راولپنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز، پاکستان نے 181 رنز بنالیے

راولپنڈی ٹیسٹ کے دوسرے روز انگلینڈ کی جانب سے پہلی اننگز میں 657 رنز کے …

Show Buttons
Hide Buttons