کالعدم ٹی ٹی پی نے پاکستان کے ساتھ ’سیز فائر‘ ختم کرنے کا اعلان کر دیا

کالعدم تحریک طالبان پاکستان(ٹی ٹی پی) نے پاکستان کے ساتھ  مذاکرات میں پیش رفت نہ ہونے پر ‘سیز فائر’ ختم کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

ترجمان تحریک طالبان پاکستان محمدخراسانی  کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے پاکستان کی طرف سے بامقصد مذاکرات نہ ہونے پر سیز فائر کا معاہدہ ختم کیا جارہا ہےجس میں قیدیوں کی رہائی ،فوجی آپریشن سمیت فریقین کے دمیان مؤثر رابطے نہ ہونے  جیسے عوامل شامل ہیں۔ ترجمان طالبان کا کہنا ہے کہ ان کے کچھ قیدی رہا کئے گئے مگر انہیں دوبارہ سے گرفتار کر لیا گیا جو کے معاہدہ کی خلاف ورزی ہے۔

جاری کردہ بیان میں ٹی ٹی پی چیف مفتی نور ولی کے مطابق بامقصد مذاکرات کی کبھی نفی نہیں کی جو کہ شرعی اصولوں کا حصہ ہیں،تاہم اس حوالے سے کوئی پیش رفت پرہونے پروہ اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے، تاہم کامیاب مذاکرات کی صورت میں آئندہ کالائحہ عمل طے کیاجائے گا۔

واضح رہے کے افغان حکومت کی درخواست پر اکتوبر میں دونوں فریقین کے درمیان شروع ہونے والے مذاکرات کا تاحال کوئی سیاسی حل نہیں نکل سکا ہے۔ ٹی ٹی پی اور حکومت پاکستان کے درمیان فاٹا کی سابقہ حیثیت میں بحالی اور قیدیوں کی رہائی سمیت  دیگر اہم معاملات پر ہونے والے مذاکرات ڈیڈ لاک کا شکار ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

اسلام آباد کی پرُ رونق فضاء میں چینی نئے سال کی خوشیاں

اسلام آباد کی پرُ رونق فضاء میں چینی نئے سال کی خوشیاں

Show Buttons
Hide Buttons