وزیراعظم دوبارہ ریکارڈ کئے گئے قومی ترانہ کے اجراء کا افتتاح 14 اگست کو کریں گے

پاکستان کے پہلے منتخب وزیراعظم شہید لیاقت علی خان کے بعد وزیراعظم شہباز شریف وہ دوسرے منتخب وزیراعظم بن گئے ہیں جو قیام پاکستان کے 75 سال مکمل ہونے پرانتہائی منفرد انداز میں دوبارہ ریکارڈ کئے گئے قومی ترانے کے اجراء کا اتوار 14 اگست 2022 کو افتتاح کریں گے۔

یہاں جاری پریس ریلیز کے مطابق قیام پاکستان کے بعد پہلی بار دسمبر 1948 میں سردارعبدالرب نشتر کی سربراہی میں حکومت پاکستان کی کمیٹی نے قومی ترانے کی تیاری پر کام شروع کیاتھا۔احمد چھاگلا کی تیار کردہ دھن کو پہلی بار وزیراعظم لیاقت علی خان اور کمیٹی کے ارکان کے سامنے پیش کیا گیا تھا۔ قومی ترانے کے لئے قائم سٹیئرنگ کمیٹی نے 10 اگست 1950 کو اس دھن کی منظوری دی۔ اگست 1954 میں حفیظ جالندھری کی تحریر کردہ کمپوزیشن کو باضابطہ منظور کر لیا گیا۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے گزشتہ دورحکومت میں اگست 2017 میں قومی ترانے کو دوبارہ ریکارڈ کرنے کا سلسلہ شروع ہوا ۔ اس مقصد کے لئے تمام ممتاز قومی اخبارات میں اشتہارات شائع کئے گئے۔ مریم اورنگزیب نے اپریل 2022 میں وزارت اطلاعات کا قلمدان سنبھالنے کے بعد اس منصوبے کی تکمیل کا کام تیزی سے شروع کیا۔ سینیٹر (ر) جاوید جبار کی سربراہی میں سٹیئرنگ کمیٹی تشکیل دی گئی جس کے ماتحت آڈیو، ویژیول ذیلی کمیٹیاں تشکیل دی گئیں۔

وزارت اطلاعات و نشریات سمیت مختلف اداروں، محکموں اور بڑی تعداد میں افراد کی شمولیت سے یہ قومی کاوش مکمل ہوئی۔ مسلح افواج کے محکمہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے اشتراک عمل کے ساتھ تینوں مسلح افواج کے براس بینڈز (سازینہ) بھی اس قومی کوشش میں شامل تھے۔

اس میں 155 گلوکاروں، 48 موسیقاروں اور 6 بینڈ ماسٹرز نے شرکت کی۔ خاص بات یہ ہے کہ قومی ترانے کو نئے سازینہ کے ساتھ بہترین عکس بندی کے ساتھ ریکارڈ کیا گیا ہے اور اسے پاکستان کے تمام ثقافتی، تہذیبی اور علاقائی رنگوں کی قوس قزح بنا دیا گیا ہے ۔ اتحاد، اخوت اور علاقائی شناختوں کا پیغام دیا گیا ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

بلوچستان میں سات روزہ انسداد پولیو مہم کا آغاز

بلوچستان  کے پانچ اضلاع کی 141 یونین کونسلوں میں 7روزہ  انسداد پولیو مہم کا آغاز ہو …

Show Buttons
Hide Buttons