سیلاب:بلوچستان میں ہلاکتوں کی تعداد 124 ہو گئی

سیلابی ریلوں نے بلوچستان، پنجاب، سندھ اور خیبر پختون خوا میں تباہی مچا دی. بلوچستان میں سیلابی ریلے 124 جانیں لے گئے۔

ملک بھر میں سیلاب کے باعث سیکڑوں دیہات ڈوب گئے، بستیاں اجڑ گئیں، لاکھوں افراد بے یار و مددگار ہو گئے۔ ہزاروں جانور سیلابی ریلوں میں بہہ گئے۔ لاکھوں ایکڑ پر کھڑی فصلیں بھی زیر آب آ گئیں۔ خیبرپختونخوا میں ایک روز میں 10 افراد دم توڑ گئے۔ بلوچستان میں  ہلاکتوں کی تعداد 124 ہو گئی۔ بلوچستان میں خضدار، نصیر آباد، لسبیلہ میں ہر طرف تباہی کے مناظر ہیں، سندھ میں ٹھٹھہ، خیرپور سمیت دیگر علاقوں میں سیلابی پانی سب بہا لے گیا۔

دریائے چناب میں طغیانی پنجاب کے کئی علاقوں میں سیلاب کا باعث بن گئی۔ جھنگ کے مقام پر دریائے چناب میں پانی کی سطح میں میں کمی نہ آسکی۔ ستر سے زائد دیہات زیر آب آگئے۔ شہر سے زمینی رابطہ بھی منقطع ہو گیا۔

سرگودھا کے کئی علاقے بھی سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں۔ سیلاب متاثرین شدید مشکلات کا شکار ہیں، سیلابی پانی سے فصلیں زیرآب آ گئیں۔ کئی علاقوں میں ابھی تک تین سے چار فٹ تک پانی کھڑا ہے۔ پنجاب میں ڈیرہ غازی خان، راجن پور، ڈی آئی خان، مردان میں بھی سیلاب نے تباہی مچا دی۔

یہ خبر پڑھیئے

یو این ڈی پی ایڈمنسٹریٹر کا سی ایم جی کے ساتھ انٹرویو

حیاتیاتی تنوع سے متعلق کنونشن کے فریقوں کی 15ویں کانفرنس کا پہلا مرحلہ اکتوبر 2021 …

Show Buttons
Hide Buttons