تازہ ترین
اتحاد و یکجہتی کے ساتھ ملک کا مثبت تشخص اجاگر کرنے کی ضرورت ہے، احسن اقبال کا ‏ گول میز کانفرنس سے خطاب

اتحاد و یکجہتی کے ساتھ ملک کا مثبت تشخص اجاگر کرنے کی ضرورت ہے، احسن اقبال

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی واصلاحات وخصوصی اقدامات احسن اقبال نے کہا ہے کہ ‏سیاسی عدم استحکام سے پالیسیوں کا تسلسل متاثر ہوتا ہے، اتحاد و یکجہتی کے ساتھ ملک کا مثبت تشخص اجاگر کرنے کی ضرورت ہے، نوجوان نسل کو جدید دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنا ترجیح ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کو ‏وزارت منصوبہ بندی اور ایچ ای سی کے تعاون سے گول میز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ اختلاف رائے کو نفرت میں تبدیل کرنے سے معاشرتی تقسیم جنم لیتی ہے، اتحاد و یکجہتی کے ساتھ ملک کا مثبت تشخص اجاگر کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوان نسل کو جدید دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنا ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ ‏آئی ٹی سیکٹر کے فروغ اور گریجویٹس کو مواقع فراہم کرنے کیلئے اقدامات کررہےہیں۔ انہوں نے کہا کہ آئی ٹی، کمپیوٹر سائنس کے نصاب کو صنعت اور اندسٹری کی ضروریات کے مطابق ہم آہنگ کرنا ہے۔

وفاقی وزیر احسن اقبال نے ماہرین سے گفتگو کے دوران نصاب کو جدید بنیادوں پر تشکیل دینے کی اہمیت کو اجاگر کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے 2013 میں وژن 2025 ترتیب دیا تا کہ ملک کو دنیا کہ پہلی 25 معیشتوں میں شمار کیا جا سکے، 2017 میں پی ڈبلیو سی نے یہ کہا کہ اگر پاکستان اسی رفتار سے چلا تو 2030 تک یہ دنیا کہ پہلی 30 معیشتوں میں شامل ہوگا مگر پھر مسلم لیگ ن کی حکومت کے خلاف سازشیں شروع کیں اور اس وژن پر عملدرآمد بند کردیا۔

انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کو ایک ٹیبل پر بیٹھ کے میثاقِ معیشت پر متفق ہونا پڑے گا اسی میں ہی اس ملک کے ترقی کا حل ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

شیاؤمی نے انسان نماء روبوٹ سائبر ون کو مارکیٹ میں متعارف کروا دیا

شیاؤمی نے انسان نماء روبوٹ سائبر ون کو مارکیٹ میں متعارف کروادیا چین کی سمارٹ …

Show Buttons
Hide Buttons