تازہ ترین
محرم الحرام میں امن و امان کا قیام، متحدہ علماء بورڈ کا اجلاس 24 جولائی کو لاہور میں منعقد ہو گا، طاہر اشرفی

محرم الحرام میں امن و امان کا قیام، متحدہ علماء بورڈ کا اجلاس 24 جولائی کو لاہور میں منعقد ہو گا، طاہر اشرفی

پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ محرم الحرام میں امن و امان کے قیام کے حوالے سے پاکستان علماء کونسل تمام مکاتب فکر کے قائدین سے رابطہ میں ہے، اس حوالے سے متحدہ علماء بورڈ کا اجلاس 24 جولائی کو لاہور میں منعقد ہو گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز پاکستان علماء کونسل کی مرکزی مجلس شوری و عاملہ کے اجلاس اور مکاتب فکر کے قائدین سے مشاورت کے موقع پر کیا۔ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ محرم الحرام میں امن و امان کے قیام کیلئے پیغام پاکستان کی روشنی میں ضابطہ اخلاق جاری کیا گیا ہے،

اس میں واضح کیا گیا ہے کہ فرقہ وارانہ منافرت، مسلح فرقہ وارانہ تصادم اور طاقت کے زور پر اپنے نظریات کو دوسروں پر مسلط کرنے کی روش شریعت اسلامیہ کے احکام کے منافی اور فسادفی الارض اور ایک قومی و ملی جرم ہے، تمام مسالک کے علماء و مشائخ اور مفتیان پاکستان انتہا پسندانہ سوچ اور شدت پسندی کو مکمل مسترد کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ضابطہ اخلاق میں بتایا گیا ہے کہ انبیاء کرام، اصحاب رسولﷺ، ازواج مطہرات اور اہل ِبیت اطہار کے تقدس کو ملحوظ رکھنا ایک فریضہ ہے اور جو شخص ان مقدسات کی توہین و تکفیر کرے گا تمام مکاتب فکر اس سے برات کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اشتعال انگیزی، نفرت اور اختلاف کی بنا پر قتل وغارت گری یا اپنے نظریات کو دوسروں پر جبر کے ذریعے مسلط کرنا یا ایک دوسرے کی جان کے درپے ہونا شریعت اسلامیہ کے مطابق حرام ہے اور ملک بھر کے علماء و مشائخ ایسے عناصر سے برات کا اعلان کرتے ہیں۔

محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ علماء و مشائخ اور مفتیان عظام کا فریضہ ہے کہ درست اور غلط نظریات میں امتیاز کرنے کے بار ے میں لوگوں کو آگاہی دیں جبکہ کسی کو کافر قرار دینا (تکفیر) ریاست کا دائرہ اختیار ہے جو ریاست شریعت اسلامیہ کی رو سے طے کرے گی،

اس کے علاوہ غیر مسلم اسلامی ریاست میں امن کے ساتھ رہتے ہیں انہیں قتل کرنا جائز نہیں ہے بلکہ گناہ ہے، ضابطہ اخلاق میں مزید بتایا گیا ہے کہ اسلام کی رو سے خواتین کا احترام اور ان کے حقوق کی پاس داری کرنا سب کے لئے ضروری ہے۔

انہوں کہا کہ خواتین کو وراثت میں حق دینا اور خواتین کی تعلیم کا حکم شریعت اسلامیہ نے دیا ہے، ریاست پاکستان کے خلاف مسلح بغاوت میں شرکت یا اس کی کسی بھی طرح مددیا حمایت کرنا کسی بھی صورت شرعی اور قانونی طور پر درست نہ ہے۔ طاہر اشرفی نے کہا کہ اس حوالے سے پاکستان علماء کونسل کے قائدین کل بدھ کو اسلام آباد میں اہم پریس کانفرنس بھی کریں گے۔

یہ خبر پڑھیئے

پیلوسی کی "جمہوری" کڑوی گولی پر امریکی بھی ناراض ہیں، سی ایم جی کا تبصرہ

پیلوسی کی “جمہوری” کڑوی گولی پر امریکی بھی ناراض ہیں، سی ایم جی کا تبصرہ

امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی نے حال ہی میں تائیوان کا دورہ کرتے …

Show Buttons
Hide Buttons