وزیراعظم کی زیر صدارت خیبرپختونخوا اور بلوچستان میں سیلاب کی صورتحال پر اعلیٰ سطح کا اجلاس

وزیراعظم محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ این ڈی ایم اے اور صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ حکام کے مشترکہ سروے کے بعد حالیہ بارشوں اور سیلاب میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کو وفاقی حکومت 10 لاکھ روپے فی کس معاوضہ ادا کرے گی، نقصانات کا جائزہ لینے اور سیلاب متاثرین سے اظہار یکجہتی کیلئے جلد بلوچستان کا دورہ کروں گا۔

جمعرات کو وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے خیبرپختونخوا اور بلوچستان میں سیلاب کی صورتحال پر اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کی۔ وزیراعظم نے کہا کہ قائم مقام چیئرمین این ڈی ایم اے فوری طور پر کوئٹہ پہنچیں گے اور سیلاب متاثرین کی امداد اور بحالی کیلئے بلوچستان حکومت کے ساتھ مل کر کام کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے درمیان مربوط کوششوں کی ضرورت ہے، خوشامد کی کوئی گنجائش نہیں، این ڈی ایم اے بلوچستان اور خیبرپختونخوا کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں اپنی موجودگی بڑھائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اﷲ کا شکر ہے کہ تمام آبی ذخائر محفوظ ہیں اور صورتحال پر 24 گھنٹے نظر رکھی جا رہی ہے۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ آئندہ دنوں میں مون سون کی مزید بارشوں کے پیش نظر تمام وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے محکمے ہائی الرٹ رہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ طوفانی بارشوں اور سیلاب کے نتیجہ میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر پوری قوم غمزدہ ہے،

ہم دکھ کی اس گھڑی میں سوگوار خاندانوں کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان اور کے پی کے کی حکومتوں نے اب تک اچھا کام کیا ہے لیکن مزید کام کرنے کی ضرورت ہے، وفاقی حکومت انہیں ہر ممکنہ تعاون فراہم کرے گی۔

یہ خبر پڑھیئے

شی چن پھنگ کا مالٹا مڈل اسکول کے "چائنہ کارنر" کے اساتذہ اور طلباء کے نام جوابی خط

شی چن پھنگ کا مالٹا مڈل اسکول کے “چائنہ کارنر” کے اساتذہ اور طلباء کے نام جوابی خط

حال ہی میں، چینی صدر شی چن پھنگ نے مالٹا میں سینٹ مارگریٹ مڈل سکول کے …

Show Buttons
Hide Buttons