تازہ ترین
وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کا ترکش ہم منصب سلیمان سوئیلو سے ٹیلیفونک رابطہ

وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کا ترکش ہم منصب سلیمان سوئیلو سے ٹیلیفونک رابطہ

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ اور ترکی کے وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا جس میں پاکستان اور ترکی کے درمیان تعلقات کے فروغ اور باہمی دلچسپی کے دیگر امور، پاکستان سے ترکی کیلئے غیر قانونی امیگریشن اور انسانی سمگلنگ روکنے کے حوالے سے تبادلہ خیال ہوا۔

ترجمان وزارت داخلہ کے مطابق وزراء نے اتفاق کیا کہ غیرقانونی امیگریشن اور انسانی سمگلنگ کو روکنا ہمارا مشترکہ ہدف ہے، انسانی سمگلنگ کے خاتمے کیلئے ایف آئی اے اور ترک امیگریشن ادارے کے درمیان ہاٹ لائن قائم کرنے کی تجویز پر بھی گفتگو کی گئی۔

ترکی کے وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو نے رانا ثنااللہ کو وزارت داخلہ کا منصب سنبھالنے پر مبارکباد پیش کی۔ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ترکی ہمارا بہترین دوست اور برادر اسلامی ملک ہے، ترکی نے پاکستان کی مشکل ترین حالات میں ہمیشہ فراغ دلانہ مدد کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ترکی اور پاکستان کے درمیان بہترین معاشی، ثفافتی اور کاروباری تعلقات ہیں، وزیر اعظم شہباز شریف اور انکے وفد کے حالیہ دورہ ترکی کے دوررس نتائج نکلیں گے، وزیراعظم شہباز شریف اور انکے وفد کی بہترین میزبانی پر ترک صدر طیب اردوان اور حکومت کے شکرگزار ہیں۔

وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے کہا کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی کے حوالے سے ترکی کے دوٹوک موقف کا معترف ہے۔ انہوں نے کہا کہ صدر طیب اردوان اور وزیراعظم شہباز شریف کے درمیان حالیہ دورہ ترکی کے دوران انتہائی مفید ملاقات ہوئی۔

ترک وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے دورہ ترکی سے باہمی تعلقات میں مزید وسعت اور مضبوطی آئے گی، پاکستان اور ترکی کے درمیان تعلقات باہمی محبت، بھائی چارے اور اعتماد پر قائم ہیں۔ انہوں نے غیر قانونی امیگریشن اور انسانی سمگلنگ کے خاتمے سے متعلق پاکستان کے اقدامات قابل تعریف ہیں،

دونوں ممالک کے درمیان اداروں کی بہتر کوارڈینیشن سے اس غیرقانونی کام کی روک تھام ممکن ہوسکے گی۔ وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے ترک وزیر داخلہ سلیمان سوئیلو کو پاکستان دورے کی دعوت دی۔ ترک وزیرداخلہ نے دعوت قبول کی اور وزیر داخلہ رانا ثنااللہ کا شکریہ ادا کیا۔

یہ خبر پڑھیئے

شدید گرمی کے باعث 2053 تک وسطی امریکہ کے 10 کروڑ افراد متاثر ہوں گے، مطالعہ

شدید گرمی کے باعث 2053 تک وسطی امریکہ کے 10 کروڑ افراد متاثر ہوں گے، مطالعہ

ایک نئی تحقیق کے مطابق سال 2053ء تک “انتہائی گرمی کی پٹی” میں رہائش پذیر …

Show Buttons
Hide Buttons