اولمپک جذبے کو فروغ دیں اور ایک بہتر دنیا کی تشکیل کریں

8 جون 2022 کو چینی اولمپک کمیٹی  نے  36ویں اولمپک ڈے کی سرگرمیاں شروع کیں، یوں 23 جون کو اولمپک ڈے کی یادگاری سرگرمیوں کا سلسلہ شروع ہوا۔

پورے چین کے لوگوں نے اولمپک جذبے کو فروغ دینے کے لیے واک اور اولمپک ثقافتی کیمپ سمیت مختلف سرگرمیوں میں حصہ لیا  ، اور اپنی قوت اور محنت  سے اولمپک تصور کو عام کیا، اور لوگوں کو “ایک ساتھ مل کر ایک بہتر دنیا بنانے  “کی دعوت دی۔

جب لوگ اولمپک جذبے کا تذکرہ کرتے ہیں  تو جو  چیز  ذہن میں آتی ہے وہ ہے  مقابلے کا جذبہ، با صلاحیت کھلاڑی، شاندار ایونٹس اور دلچسپ مقابلے ۔ درحقیقت، کھیلوں کے مقابلوں میں انصاف، مساوات اور آزادی کے جذبے کی روشنی میں ، کھیلوں میں  عام لوگوں کی وسیع شرکت اور “زیادہ تیز،زیادہ  مضبوط اور زیادہ اعلیٰ” کے جذبے کے تحت  خود کو چیلنج کرنے کی جستجو “اولمپک جذبے ”  کا نچوڑ ہے۔ موجودہ ہنگامہ خیز بین الاقوامی صورتحال کے پیشِ نظر، آئی او سی نے اولمپک کے نعرے ” زیادہ تیز،زیادہ  مضبوط اور زیادہ اعلیٰ” کے بعد لفظ “زیادہ اتحاد” کا اضافہ کیا، جس نے اولمپک روح کے مفہوم کو مزید تقویت بخشی، اولمپک جذبے کے مفہوم کو مزید بامعنی بنایا ، اور دنیا کو فائدہ پہنچانے کی یہ وسیع النظری چینی روایتی ثقافت کے انسان دوست جذبات کے ساتھ زیادہ مطابقت رکھتی ہے، جس سے چین میں اولمپک جذبے کو زیادہ  وسیع پیمانے پر مقبول بنایا گیا ہے۔

کھیل صرف کھیل ہی نہیں بلکہ تعلیم اور زندگی کا فلسفہ بھی ہیں۔ اولمپک چارٹر بتاتا ہے، “اولمپزم زندگی کا ایک فلسفہ ہے جو متوازن طریقے سے جسم، دماغ اور روح کی مختلف خصوصیات کو یکجا اور بہتر بناتا ہے۔” یہ روایتی چینی مارشل آرٹس کے جذبے سے مطابقت رکھتا ہے۔ جب بات چینی کھیلوں کی ہو تو دنیا بھر کے لوگ سب سے پہلے چینی مارشل آرٹس کے بارے میں سوچتے ہیں۔ درحقیقت، چینی مارشل آرٹ نہ صرف لڑائی کا ایک طریقہ ہے، بلکہ چینی روایتی ثقافت کا علمبردار بھی ہے، جو منفرد روحانی مفہوم پر مشتمل ہے۔ مثال کے طور پر، طاقت، رفتار اور حملہ کرنے کی صلاحیت کو بہتر بنانے کی تربیت کے مقابلے میں، چینی مارشل آرٹس اپنے دماغ، طاقت، توانائی اور روح کو کنٹرول کرنے کی صلاحیت پر زیادہ توجہ دیتے ہیں ،  “ہم آہنگی” کی روایتی قدر کی مضبوطی پر زور دیتے ہیں،”ہم آہنگی” کے روایتی نظریہ  کی پیروی کرنے کا کہتے ہیں، مارشل آرٹس کی تربیت کے ذریعے جنگجوؤں کی مرضی اور اخلاقیات کو ترقی دی جاتی ہے، اور لوگوں کو مارشل آرٹس کے ذریعے تعلیم دی جاتی ہے، تاکہ لوگ روایتی اصولوں، اخلاقیات، عادات اور  اپنی بہتری سمیت دیگر   بنیادی اقدار اور فضائل حاصل کر سکیں. لہذا، چینی مارشل آرٹس کا حتمی مقصد روایتی ثقافتی اخلاقیات کے ساتھ پرتشدد قوتوں کو مساوی  طاقت میں تبدیل  کرنا ہے۔ اس طرح کے مارشل آرٹس اور عالمی امن اور خیر خواہی کا تصور جو اولمپک جذبے سے پیش کیا جاتا ہے،، تمام بنی نوع انسان کے لئے قابل تقلید ہے۔

چینی صدر شی جن پھنگ خود  اولمپک جذبے کے فروغ دینے والے اور عملبردار  ہیں، وہ کھیلوں کے بڑے شائق بھی ہیں، خاص طور پر فٹ بال اور تیراکی جیسے کھیلوں سے محبت کرتے ہیں اور کھیل کے جذبے سے پورے معاشرے میں مثبت توانائی لانے پر خصوصی توجہ دیتے ہیں۔ اگست 2019 میں، شی جن پھنگ نے صوبہ گانسو میں ایک معائنے کے دورے کے دوران ایک مقامی پرائمری اسکول کے طلباء کے ساتھ بات کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ وہ جسمانی ورزش کو عادت بنائیں اور  ایک مہذب روح کے ساتھ  ایک سخت جان جسم کی تعمیر کریں ۔دو ہزار سترہ میں منعقدہ  کمیونسٹ پارٹی آف چائنا  کی 19ویں قومی کانگریس کی رپورٹ میں “صحت مند چین کی حکمت عملی ” کو نئے دور میں چینی خصوصیات کے حامل سوشلزم کی ایک بڑی اسٹریٹجک تعیناتی کے طور پر بیان کیا گیا ہے،اور  اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ “عوام کی صحت قومی ترقی اور قومی خوشحالی کی ایک اہم علامت ہے۔”یوں چین میں قومی تندرستی اور قومی صحت کے ایک نئے دور کا آغاز ہوا۔  یہ چینی عوام کی طرف سے اولمپک جذبے  کا سب سے

اچھا اظہار ہے۔ چین کی معیشت اور معاشرے کی مسلسل ترقی کے ساتھ، اولمپک جذبے کو یقینی طور پر چین میں مقبول عام بنایا جائے گا، جو بنی نوع انسان کے ہم نصیب معاشرے کی تعمیر میں “زیادہ ہم آہنگی”کا  حامل چینی جذبہ ڈالےگا۔

یہ خبر پڑھیئے

جدید ترین سینٹر آف ایکسی لینس برائے ٹیوٹ حکومت پنجاب کے حوالے

جدید ترین سینٹر آف ایکسی لینس برائے ٹیوٹ حکومت پنجاب کے حوالے

پنجاب میں سکلز سیکٹر میں بہتری کیلئے یورپی یونین، جرمنی اور ناروے نے ایک جدید …

Show Buttons
Hide Buttons