حکومت نے مختلف شعبوں میں جدت لانےکے لیے 7 ارب روپے کا انوویشن فنڈ شروع کیا ہے، وفاقی وزیر احسن اقبال

وفاقی وزیر منصوبہ بندی ترقی ،اصلاحات وخصوصی اقدامات پروفیسر احسن اقبال نے کہا ہے کہ مستقبل کی معاشی کامیابی علم کی مہارت سے جیتی جائے گی۔ محققین اور سائنسدان قومی اثاثہ ہیں، حکومت نے مختلف شعبوں میں جدت کے لیے 7 ارب روپے کا انوویشن فنڈ شروع کیا ہے ۔ مستقبل کی لڑائیاں میدان جنگ میں نہیں،کلاس رومز اور لیبارٹریز میں ہوں گی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو پنجاب یونیورسٹی کے سینٹر آف ایکسی لینس مالیکیولر بائیولوجی کے وفد سے گفتگو کر تے ہوئے کیا۔

سی ای ایم بی کے وفد کی سربراہی ڈائریکٹر ڈاکٹر کوثر ملک کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے مختلف شعبوں میں جدت لانےکے لیے 7 ارب روپے کا انوویشن فنڈ شروع کیا ہے۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ ہائر ایجوکیشن کے شعبے کو فروغ دینے کے لیے نئے بجٹ میں ایچ ای سی کے ترقیاتی بجٹ میں 68 فیصد اضافہ کیا گیا ہے جسے پچھلی حکومت نے نظر انداز کیا تھا۔

سی ای ایم بی کے وفد نے وزیر کو تحقیق اور نئی بی ٹی کپاس، سنٹر کی جانب سے بیج کی نشوونما سے آگاہ کیا جو وائرس کے خلاف اور زیادہ پیداوار دینے والی قسم ہے۔ یہ بیج پاکستان کی زراعت میں 173 ارب روپے کا اضافہ کر سکتا ہے۔ اس منصوبے کا مقصد سی جی ایم پی کی تعمیل پائلٹ پیمانے پر پیداوار، تعلیم میں سرمایہ کاری میں تربیت کے ذریعے آبادی کی انسانی مہارت کی بنیاد کو بہتر بنانا ہے۔ سی ای ایم بی نے لیبارٹری ریسرچ کی کمرشلائزیشن کو فروغ دینے کے لیے سی جی ایم پی کمپلائنس پائلٹ اسکیل پروڈکشن سہولیات کے قیام کی تجویز پیش کی ۔

وفاقی وزیر نے منصوبے کا PC-1 جمع کرانے کی ہدایت کی اورکہا کہ مستقبل کی لڑائیاں میدان جنگ میں نہیں ، کلاس رومز اور لیبارٹریز میں ہوں گی۔ لہذا جس کے پاس بہتر کلاس رومز اور پیداواری لیبارٹریز ہوں گی وہ مستقبل جیت جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ علمی معیشت کےمستقبل کا محاذ ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

پیلوسی کا دورہ تائیوان عالمی تنقید کی زد میں

Show Buttons
Hide Buttons