چین کے خلائی مشن شینزو۔13 کے عملے کی اپریل میں زمین پر واپسی

چین کے خلائی مشن شینزو۔13 کے عملے کی اپریل میں زمین پر واپسی

چین کے خلائی مشن شینزو۔13 کے خلاباز پانچ ماہ سے خلا میں موجود ہیں اور اپریل میں اُن کی زمین پر واپسی ہو گی۔ چین کے اس انسان بردار خلائی مشن کے دوران کئی نئی کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں۔

گزشتہ پانچ ماہ میں، چینی خلابازوں نے خلائی اسٹیشن کی تعمیر کے لیے کلیدی ٹیکنالوجی کے ٹیسٹ کیے ہیں۔ پہلی مرتبہ، چینی خلابازوں نے کارگو خلائی جہاز کی خلائی اسٹیشن کے ساتھ ڈاکنگ کے لیے دستی ریموٹ کنٹرول آلات کا استعمال کیا جس کی فعال کارکردگی نے بعد میں خلائی اسٹیشن کی تعمیر کے لیے قیمتی تجربہ فراہم کیا ہے۔

چینی خلابازوں نے خلائی گاڑی سے باہر نکلتے ہوئے کامیابی کے ساتھ دو سرگرمیاں مکمل کیں۔ علاوہ ازیں خلائی اسٹیشن میں خلابازوں کی صحت، زندگی اور کام سے متعلق معاون ٹیکنالوجی کی مزید تصدیق ہوئی ہے۔ خلائی اسٹیشن سے وابستہ امور کو انجام دینے میں چین کے انسان بردار خلائی منصوبے کے ہر نظام کی فعال کارکردگی اور خلائی اور زمینی رابطے سمیت مختلف سسٹمز کے درمیان مطابقت کا جامع جائزہ لیا گیا۔ خلابازوں نے کئی سائنسی اور تکنیکی تجربات کیے اور خلائی تدریس سے متعلق سرگرمی میں بھی شریک ہوئے۔

یہ خبر پڑھیئے

اوپیک پر کمزور ہوتی امریکی گرفت

اوپیک پر کمزور ہوتی امریکی گرفت

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons