افغانستان میں غذائی قلت، دو کروڑ تیس لاکھ افراد بھوک کا شکار ہیں: اقوام متحدہ

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ افغانستان کے عوام کو خوراک کے عدم تحفظ اور غذائی قلت کے بحران کا سامنا ہے۔

اقوام متحدہ کے ریذیڈنٹ اور انسانی ہمدردی کے امور کے رابطہ کار Ramiz Alakbarov نے کابل میں ایک بیان میں کہا کہ ملک میں انتہائی بھوک کا شکار لوگوں کی تعداد مارچ میں 2 کروڑ 30 لاکھ تک پہنچ گئی ہے جو جولائی میں ایک کروڑ 40 لاکھ تھی۔

انہوں نے افغان عوام کے استحقاق کو تحفظ فراہم کرنے اور ان کے روزگار کو برقرار رکھتے ہوئے بھوک اور غذائی قلت کے اثرات کم کرنے کا اعادہ کیا۔ Alakbarov نے کہا کہ اقوام متحدہ اور اس کے شراکت دار دور دراز اور پسماندہ علاقوں تک رسائی کیلئے خدمات کا عمل تیز کرنے پر توجہ مرکوز رکھیں گے۔

یہ خبر پڑھیئے

اوپیک پر کمزور ہوتی امریکی گرفت

اوپیک پر کمزور ہوتی امریکی گرفت

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons