افغانستان: پولیو ویکسینٹرز کے قتل میں ملوث دو افراد گرفتار

افغانستان کی پولیس نے کہا ہے کہ پولیو کے قطرے پلانے والی ٹیم کے 7 ارکان کے قتل کے منسلک دو ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

خبرایجنسی اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق شمالی صوبے کندوز میں پولیو کے خاتمے کے لیے گھر گھر مہم کے دوران ہیلتھ ورکرز کو قتل کیا گیا تھا۔ کندوز پولیس کے ترجمان قاری عبیداللہ عبیدی کا کہنا تھا کہ گرفتار افراد نے جرم کا اعتراف کرلیا ہے اور کہا ہے کہ انہوں نے صوبے میں نیشنل ریزیسٹینس فرنٹ (این آر ایف) کی قیادت سے احکامات ملنے کے بعد ویکسینیٹرز کو قتل کیا ہے۔

این آر ایف کی قیادت طالبان مخالف سابق کماندر احمد شاہ مسعود کے بیٹے کررہے ہیں۔ گروپ نے گزشتہ برس طالبان کے خلاف وادی پنج شیر میں مزاحمت کی تھی اور طالبان کے خلاف یہ آخری مزاحمت تھی تاہم طالبان کی جانب سے ستمبر میں عبوری حکومت کے اعلان کے بعد چند دنوں میں یہاں بھی قبضہ کرلیا گیا تھا۔

قدرتی مناظر سے بھرپور وادی پنج شیر کو 1980 کی دہائی میں سوویت یونین کی فورسز اور 1990 کی دہائی میں طالبان کے خلاف بھرپور مزاحمت پر شہرت ملی تھی۔ احمد شاہ مسعود کو ‘شیر پنج شیر’ کہا جاتا تھا اور انہیں 2001 میں القاعدہ نے امریکا میں 11 ستمبر کو ہونے والے حملے کے صرف 2 دن بعد قتل کیا تھا۔

یہ خبر پڑھیئے

اوپیک پر کمزور ہوتی امریکی گرفت

اوپیک پر کمزور ہوتی امریکی گرفت

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons