بھارتی فوج کی حراست میں پاکستانی قیدی کا قتل، بھارتی ناظم الامور دفتر خارجہ طلب

بھارتی فوج کی حراست میں پاکستانی قیدی کا قتل، بھارتی ناظم الامور دفتر خارجہ طلب

پاکستان نے پونچھ سیکٹر میں قابض بھارتی افواج کی حراست میں پاکستانی شہری کے قتل پر  بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کر کے شدید احتجاج ریکارڈ کرایا۔

دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق دفتر خارجہ طلب کر کے بھارتی ناظم الامور کو بتایا گیا کہ پاکستانی قیدی ضیا مصطفیٰ 2003 سے بھارتی قید میں تھا، پاکستانی قیدی کا جیل سے دور پر اسرار قتل سنگین سوالات اٹھاتا ہے۔

دفتر خارجہ کا کہنا تھاکہ بھارت کی طرف سے ماورائے عدالت قتل کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے، بھارت کی جانب سے پاکستانی اور کشمیری قیدیوں کے ماورائے عدالت قتل کی مذمت کرتے ہی۔

دفتر خارجہ نے مطالبہ کیا کہ بھارت واقعے کی فوری شفاف تحقیقات کرے اور انصاف کو یقینی بنائے۔

دفتر خارجہ نے بھارت سے مطالبہ کیا کہ بھارت میں قید پاکستانیوں کی رہائی یا وطن واپسی تک ان کی حفاظت یقینی بنائی جائے۔

یہ خبر پڑھیئے

قومی ایتھلیٹیکس چیمپئن شپ کا اختتام: آرمی اور واپڈا کی ٹیمیں فاتح قرار

قومی ایتھلیٹیکس چیمپئن شپ کا اختتام: آرمی اور واپڈا کی ٹیمیں فاتح قرار

قومی ایتھلیٹیکس چیمپئن شپ کا پچاسواں ایڈیشن لاہور میں ختم ہوگیا، تین روزہ مقابلوں میں …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons