چین اور پیسیفک جزیرے کے ممالک کے وزرائے خارجہ کے پہلے اجلاس کا انعقاد

چین اور پیسیفک جزیرے کے ممالک کے وزرائے خارجہ کے پہلے اجلاس کا انعقاد

اکیس اکتوبر کو، چین اور پیسفک جزیرے کے ممالک کے وزرائے خارجہ کا پہلا اجلاس ویڈیو لنک کے ذریعے منعقد ہوا۔

چین کے ریاستی کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ ای نے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ چین پیسفک جزیرے کے ممالک کی آزادانہ ترقی کی بھرپور حمایت کرتا ہے  اور ان ممالک کے ساتھ بنی نوع انسان کے ہم نصیب معاشرے کی تعمیر کے تصور کی بنیاد پر قریبی جامع اسٹریٹجک شراکت داری قائم کرے گا۔

اس کے ساتھ چین نے چھ نکاتی تجاویز پیش کیں جن میں، پالیسی سازی میں باہمی مفاہمت کو مضوط کرنا، انسداد وباء کے تعاون کو گہرا کرنا، معاشی بحالی کو فروغ دینا، درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لئے قریبی تعاون کو فروغ دینا شامل ہیں۔ چین نے متعلقہ ممالک کے ساتھ  ثقافتی تبادلوں کو بڑھانے کے علاوہ موسمیاتی تبدیلی کے حوالے سے چائنا پیسیفک آئی لینڈ کنٹری کو آپریشن سینٹر قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اجلاس میں شریک پیسیفک جزیرے کے ممالک کے نمائندوں نے دو طرفہ وزرائے خارجہ کے اجلاس کا نظام قائم کرنے پر اتفاق کیا۔ انہوں نے چین کی طویل المدتی بے لوث مدد اور پیسیفک   جزیرے کے ممالک کی ترقی کی حمایت کرنے پر چین کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے ایک چین کی پالیسی پر قائم رہنے کا اعادہ کیا، اپنے بنیادی مفادات کے تحفظ میں چین کی حمایت کی۔

شرکاء نے کووڈ-19 ویکسین کو عالمی عوامی مصنوعات بنانے کے چین کے عمل کو سراہا، اور اس وباء سے لڑنے کے لئے چین کے ساتھ اتحاد کو مضبوط کرنے، کثیرالجہتی پر عمل پیرا ہونے اور ماحولیاتی تبدیلی سے نمٹنے جیسے عالمی مسائل پر چین کے ساتھ رابطے اور تعاون کو مضبوط بنانے کی خواہش ظاہر کی۔

اجلاس میں ایٹمی آلودہ پانی کے اخراج کے مسئلے پر بھی توجہ دی گئی اور بین الاقوامی جوہری عدم پھیلاؤ کے نظام اور جنوبی بحرالکاہل کے ایٹمی فری زون کو برقرار رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا گیا۔

یہ خبر پڑھیئے

قومی ایتھلیٹیکس چیمپئن شپ کا اختتام: آرمی اور واپڈا کی ٹیمیں فاتح قرار

قومی ایتھلیٹیکس چیمپئن شپ کا اختتام: آرمی اور واپڈا کی ٹیمیں فاتح قرار

قومی ایتھلیٹیکس چیمپئن شپ کا پچاسواں ایڈیشن لاہور میں ختم ہوگیا، تین روزہ مقابلوں میں …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons