یمن جنگ میں 10 ہزار بچے مارے گئے یا زخمی ہوئے۔ یونیسیف

یمن جنگ میں 10 ہزار بچے مارے گئے یا زخمی ہوئے۔ یونیسیف

اقوام متحدہ کے بچوں کے ادارے یونیسیف نے کہا ہے کہ یمن جنگ میں 10 ہزار بچے مارے گئے یا زخمی ہوئے۔

یونیسیف کے ترجمان جیمز ایلڈر نے جنیوا میں بریفنگ کے دوران یمن جنگ ختم کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یہ تعداد وہ ہے جو اداروں کو معلوم ہے اور لاتعداد ایسے بچے بھی ہیں جن کا علم نہیں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ‘یونیسیف کو ہنگامی بنیاد پر 23 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کی ضرورت ہے تاکہ 2022 کے وسط تک یمن میں زندگیاں بچانے کی کوششوں کو جاری رکھ  سکے۔

یہ خبر پڑھیئے

ایرانی پارلیمنٹ نے ایران کی شنگھائی تعاون تنظیم میں شمولیت کا بل منظور کر لیا

27 نومبر کو ایرانی پارلیمنٹ نے ایران کے شنگھائی تعاون تنظیم کا رکن بننے کا …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons