امریکی رہنما کے سنکیانگ سے متعلق بیانات گھناونی سیاسی سازش ہیں، چینی وزارت خارجہ

امریکی رہنما کے سنکیانگ سے متعلق بیانات گھناونی سیاسی سازش ہیں، چینی وزارت خارجہ

امریکی رہنما کے سنکیانگ سے متعلق بیانات گھناونی سیاسی سازش ہیں، چینی وزارت خارجہ

اٹھارہ اکتوبر کو چینی وزارت خارجہ کی پریس کانفرنس میں امریکی صدر  جوبائیڈن کی جانب سے یونیورسٹی آف کنیکٹیکٹ میں “ڈوڈ ہیومن رائٹس سنٹر” کی افتتاحی تقریب میں سنکیانگ سے متعلق تبصرے کے حوالے سے کیے جانے والے سوال کا جواب دیتے ہوئے ترجمان چاؤ لی جیان نے کہا کہ سنکیانگ میں ویغور قومیت  سے متعلق نام نہاد ظلم اور جبری مشقت سفید جھوٹ ہے۔

اس وقت، سنکیانگ کا معاشرہ مکمل طور پرہم آہنگ اور مستحکم ہے، معاشی ترقی ہو رہی ہے اور قومیتوں کا اتحاد اور مذہبی ہم آہنگی موجود ہے ۔ تمام نسلی گروہوں کے لوگ پرامن اور خوشگوار زندگی گزار رہے ہیں۔ ان کے قانونی حقوق اور مفادات کا مکمل تحفظ کیا گیا ہے۔ سنکیانگ میں نام نہاد انسانی حقوق کا مسئلہ ایک گھناونی سیاسی سازش ہے جس کا اصل مقصد سنکیانگ کو غیر مستحکم کرنا اور چین کی ترقی میں رکاوٹ ڈالنا ہے۔

امریکی صدر کے علاوہ پندرہ اکتوبر کو امریکی نائب وزیر خارجہ وینڈی شرمین نے واشنگٹن میں کی گئی  تقریر میں کہا کہ چین کے بارے میں امریکی پوزیشن واضح ہے۔امریکہ جب ضرورت ہو گی چین کے ساتھ مقابلہ کرے گا اور جب امریکہ اور دنیا کے مفادات میں ہوگا چین کے ساتھ تعاون کرے گا۔

اس حوالے سے چینی ترجمان چاؤ لی جیان نے کہا کہ امریکہ کے متعلقہ ریمارکس اب بھی نام نہاد “مقابلے ، تعاون اور محاذ آرائی” کو دہرارہے ہیں۔ اصل بات چین کو مسابقت کے نعرے تلے دبانا ہے۔ بنیادی طور پر امریکہ چین کو اسٹریٹیجک حریف سمجھتا ہے یہ ایک غلط تاثر ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

فیفا ورلڈ کپ، گروپ ای کی ٹیموں سپین اور جرمنی کے درمیان میچ 1-1 گول سے برابر

سپین اور جرمنی کی ٹیموں کے درمیان 22ویں فیفا ورلڈ کپ کا 28واں میچ 1-1 …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons