کابل ڈرون حملے میں 10 افراد کی ہلاکت، امریکہ کی معاوضے کی پیشکش

کابل میں ہونے والے ڈرون حملے میں 10 افراد کی ہلاکت پر امریکا نے متاثرین کو معاوضے کی پیشکش کر دی۔

امریکی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ حملے میں ہلاک ہونے والوں کے اہلخانہ کو معاوضہ دینے کے لیے تیار ہیں۔ اگر متاثرین کے اہلخانہ امریکا منتقل ہونا چاہیں تو انہیں منتقل کیا جائے گا۔ امریکی وزارت دفاع نے بیان میں کہا ہے کہ امریکی محکمہ خارجہ کے ساتھ ملکر اس معاملے پر بھی کام کر رہے ہیں۔

امریکا نے کابل میں ڈرون حملے میں داعش کے دہشتگرد کی ہلاکت کا دعویٰ کیا تھا۔ حملے میں کوئی دہشت گرد ہلاک نہیں ہوا تھا۔ مرنے والے تمام افراد عام افغان شہری تھے جس میں بچے بھی شامل تھے۔ امریکا نے حملے میں معصوم افراد کی ہلاکت پر معذرت کرتے ہوئے غلطی کا اعتراف کیا تھا۔

امریکہ کی جانب سے 29 اگست کو کابل میں ڈرون حملہ کیا گیا تھا جس میں بے گناہ و معصوم شہریوں کی ہلاکت ہوئی تھی۔ کابل پر کیے جانے والے ڈرون حملے کے بعد امریکہ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ اس نے ایئرپورٹ پر کیے جانے والے خود کش حملے کا بدلہ لے لیا ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی الوداعی ملاقات

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons