تازہ ترین
چین زرعی پیداوارکی صلاحیت میں بہتری کےلیے ترقی پزیر ممالک کا بھرپور مددگار

چین زرعی پیداوارکی صلاحیت میں بہتری کےلیے ترقی پزیر ممالک کا بھرپور مددگار

سولہ اکتوبر کو خوراک کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔ کووڈ-۱۹ کی وبائی صورتحال سمیت دیگرعناصر کے باعث دنیا بھر میں خوراک کی کمی کا شکار ہونے والوں کی تعداد میں بے حداضافہ ہوا ہے۔

چین تسلسل کے ساتھ مختلف طریقوں سے زرعی پیداوار کی صلاحیت میں بہتری کے لیے ترقی پزید ممالک کی مدد کرتا رہتا ہے۔  سال 1996 سے لے کر اب تک چین نے افریقہ ، ایشیا، جنوبی بحر الکاہل  اور  کیریبین سمیت  چالیس سے زائد ممالک اور علاقوں کے لیے 1100 زرعی ماہرین کو وہاں بھیجاہے۔اقوام متحدہ  کی تنظیم برائے خوراک و زراعت کے تحت چینی ماہرین نے کئی ممالک میں 1000 سے زائد زرعی ٹیکنالوجیز پیش کیں ،جن میں فصلوں کی پیداوار ، جانوروں کی پرورش اور آبی زراعت ،کھیتوں میں آبپاشی  اور زرعی مصنوعات کی پروسیسنگ وغیرہ شامل ہیں۔ان  پروجیکٹس  کی مدد سے  مقامی  فصلوں کی پیداوار میں اوسطاً 30 سے ​​60 فیصد اضافہ ہوا۔

اب تک تقریباً ایک لاکھ مقامی کسانوں کو عملی تربیت دی گئی ہے اور دس لاکھ سے زائد کسانوں نے اس سے فائدہ اٹھایا ہے۔آفات کے سامنے دنیا کے سب سے بڑے ترقی پزیر اور ذمہ دار ملک کی حیثیت سے چین نے دوسرے ممالک کی بھرپور مدد کی ہے ۔سال دو ہزار بیس میں ٹدی دل کے حملوں سے نمٹنے کے لیے  چین نے پاکستان، ایتھوپیا  اور یوگنڈا سمیت ترقی پذیر ممالک کو کیڑے مار ادویہ ، سپرے  مشینز ، حفاظتی لباس ، ماسک اور دستانے فراہم کیے۔اس کے ساتھ ہی چین ،اقوام متحدہ کی تنظیم برائے خوراک و زراعت کے ساتھ مل کر چین میں انسانی ہمدردی کی بنیاد پر  ہنگامی گوداموں اور مراکز کی تعمیر کو آگے بڑھارہا ہے تاکہ  امدادی سرگرمیوں کے لیے مدد و معاونت فراہم کی جائے ۔ 

یہ خبر پڑھیئے

راولپنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز، پاکستان نے 181 رنز بنالیے

راولپنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز، پاکستان نے 181 رنز بنالیے

راولپنڈی ٹیسٹ کے دوسرے روز انگلینڈ کی جانب سے پہلی اننگز میں 657 رنز کے …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons