تازہ ترین

وزیراعظم کا افغانستان کی صورتحال پر پاکستان ایران کے درمیان قریبی تعاون جاری رکھنے پر زور

وزیراعظم عمران خان نے افغانستان کی صورتحال پرچھ ہمسایہ ممالک کے پلیٹ فارم کے ذریعے پاکستان اور ایران کے درمیان قریبی تعاون جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

ایران کی مسلح افواج کے چیف آف جنرل سٹاف میجر جنرل محمد باقری سے اسلام آباد میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان کے امن واستحکام میں دونوں ممالک کا براہ راست مفاد ہے۔ وزیراعظم نے کہاکہ پاکستان پائیدارمعیشت اوررابطوں کے فروغ پرمبنی ایک پُرامن اور مستحکم افغانستان دیکھنے کا خواہشمند ہے۔

وزیراعظم نے اس امر پر بھی زور دیا کہ وہ عالمی برادری کو افغانستان کے لئے انسانی امداد کی فوری فراہمی کے لئے مثبت اندازمیں متحرک رہنا چاہیے اور اقتصادی بحران روکنے کے اقدامات کرنے چاہئیں۔وزیراعظم نے اس اہم موقع پر خاص طو رپر سے موسم سرما کے آغاز سے پہلے افغان عوام کی مدد کے لئے افغانستان کے مالی اثاثوں کی بحالی کی ضرورت پر زور دیا۔

عمران خان نے افغانستان میں قومی مصالحت اورجامع سیاسی تصفیے کی اہمیت کو بھی اجاگر کیا۔ وزیراعظم نے پاک ایران سرحد کو امن اوردوستی کی سرحدقرار دیا اور دونوں طرف سیکیورٹی کو مضبوط بنانے کے لئے کئے جانے والے اقدامات کوبھی واضح کیا۔

وزیراعظم نے سرحد پر مارکیٹوں کے قیام کے معاہدے کا ذکر کرتے ہوئے اس امر پر زور دیا کہ ان مارکیٹوں کے آغاز سے علاقے میں روزگار کے مواقع پیدا کرنے میں مدد ملے گی۔ وزیراعظم نے ایران خصوصاً رہبراعلیٰ کی طرف سے جموں وکشمیر کے تنازع پر کشمیریوں کی بھرپور حمایت کو سراہتے ہوئے کہا کہ کشمیری عوام اپنے جائز نصب العین کے لئے ایران کی بھرپور حمایت کی توقع رکھتے ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

بیجنگ سرمائی اولمپک اور پیرالمپک سرمائی کھیلوں کے بعد کی ہیریٹیج رپورٹ اور کھیلوں کے بعد پائیداری ترقی کی رپورٹ جاری کردی گئی

4 فروری کو2022  بیجنگ سرمائی اولمپک اور پیرالمپک سرمائی کھیلوں کی پہلی سالگرہ ہوگی۔یکم تاریخ کو …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons