سنکیانگ سے متعلق جھوٹ پھیلانے کے تین طریقہ کار اپنائے گئے ہیں ،چینی وزارت خارجہ

سنکیانگ سے متعلق جھوٹ پھیلانے کے تین طریقہ کار اپنائے گئے ہیں ،چینی وزارت خارجہ

چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وین بن نے چودہ جنوری کو منعقدہ پریس کانفرنس میں امریکی سیاستدانوں کی جانب سے سنکیانگ سے متعلق جھوٹ پھیلانے کے لیے بنائے گئے طریقہ کار عیاں کرتے ہوئے کہا کہ سنکیانگ سے متعلق جھوٹ پھیلانے کے تین طریقہ کار اپنائے گئے ہیں۔ 

پہلا، جھوٹ بولنے والے اکثر خود کو وہ بتاتے ہیں جو کہ وہ نہیں ہوتے یعنی خود کو کسی کردارکے پردے میں چھپاتے ہیں ، کبھی نام نہاد ماہرین اور علمی اداروں کے نام سے جھوٹ پھیلاتے ہیں تو کبھی خود کو ایک “مظلوم “بتاتے ہیں  یا پھر “قانون” کی آڑ لے کر  جھوٹی کہانی تیار کرتے اور پھیلاتے ہیں ۔

دوسرا ،سنکیانگ سے متعلق جھوٹ پھیلانے والےدیکھنے میں الگ الگ کردار ہوتے ہیں ،لیکن درحقیقت وہ ایک ہی “مالک ” کےحکم پر عمل کرتے ہیں۔

تیسرا،جعلی خبر بنانے اور جھوٹ گھڑنے کے طریقہ کار کا سراغ تو ماضی قریب کی تاریخ سے ہی ملتا ہے کہ امریکہ نے  سفید پاؤڈر کو ثبوت بنا کر عراق پر مہلک ہتھیاروں کا الزام لگایا اور جنگ چھیڑی ۔بیس سال کے بعد وہ یہی جعل سازی دوبارہ دہرا رہا ہے اور کچھ “اداکاروں “کی نام نہاد “گواہی ” کی بنیاد پر سنکیانگ پر دباؤ ڈالنا چاہتا ہے ۔ وہ اپنے اس ڈرامے میں بری طرح ناکام ہوگا۔

یہ خبر پڑھیئے

ورلڈ اکنامک فورم سے چینی صدر کا خطاب، امید کا ایک اور پیغام

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons