کنٹرول لائن کے دونوں جانب اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری کل یوم سیاہ منائیں گے

کنٹرول لائن کے دونوں جانب اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری کل یوم سیاہ منائیں گے جس کا مقصد 1947 میں آج ہی کے دن بھارت کے مقبوضہ وادی پر غیر قانونی تسلط کے خلاف احتجاج کرنا ہے۔

جموں و کشمیر پیپلز پولیٹیکل پارٹی کے چیئر مین انجینئر ہلال احمد وار نے سرینگر میں ایک بیان میں کہا ہے کہ ستائیس اکتوبر کشمیر کی تاریخ میں سیاہ ترین دن ہے جب بھارتی فورسز نے کشمیر ی عوام کی مرضی کے خلاف علاقے پر قبضہ کر لیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ بھارتی جمہوریت کے چہرے پر بد نما داغ اور اقوام متحدہ کی ساکھ، مقصد اور بقا پر بڑا سوالیہ نشان ہے۔

جموں و کشمیرمسلم کانفرنس کے چیئر مین شبیراحمد ڈار، محاذ آزادی کے چیئرمین محمد اقبال میر اور تحریک استقلال کے غلام نبی وسیم نے اپنے اپنے بیانات میں عوام پر زور دیا کہ وہ دنیا کو یہ پیغام دینے کیلئے کل یوم سیاہ منائے کہ کشمیری عوام تنازع کشمیر کا اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل اور حق خود ارادیت کا حصول چاہتے ہیں۔

ان رہنمائوں نے بھارتی فوج کے ہاتھوں شہریوں اور قیدیوں کے شہادتوں کے واقعات پر گہری تشویش ظاہر کی اور اقوام متحدہ پر زور دیا ہے کہ بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں بھارتی فوج اور مودی حکومت کی جانب سے جاری نسل کشی کا نوٹس لے اور یہ سلسلہ بند کرایا جائے۔

یہ خبر پڑھیئے

امریکی کمپنیاں پاکستان کے مختلف شعبہ جات میں سرمایہ کاری کر کے بہترین منافع کما سکتی ہیں، وزیر خارجہ

وزیر خارجہ کا سلامتی کونسل کے صدر، اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کو خط

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے صدر اور اقوام …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons