شہنشاہ قوالی استاد نصرت فتح علی خان کا 73واں یوم پیدائش

شہنشاہ قوالی استاد نصرت فتح علی خان کا 73واں یوم پیدائش

تیرہ  اکتوبر 1948 کو فیصل آباد میں پیدا ہونے والے نصرت فتح علی خان نے بطور قوال دم مست قلندر مست مست سے ملک گیر شہرت حاصل کی، انہوں نے قوالی کی صنف میں مغربی انداز متعارف کروایا جسے دنیا بھر میں بھرپور پذیرائی حاصل ہوئی۔ استاد نصرت فتح علی خان کے مشہور گیتوں میں اکھیاں اڈیکدیاں، ایس توں ڈاڈا دکھ نہ کوئی،  میرا پیا گھر آیا، ، میری زندگی ہے تو، آفرین آفرین، یہ جو ہلکا ہلکا سرور ہے اور دلوں میں اتر جانے والی حمد وہی خدا ہے قابل ذکر ہیں۔قوالیوں کے 125 البم ریلیز کیے جانے کی وجہ سے نصرت فتح علی خان کا نام گنیز بک آف دی ورلڈ ریکارڈ میں درج کیا گیا۔ انہوں نے جدید مغربی موسیقی اور مشرقی کلاسیکی موسیقی کی آمیزش سے ایک نیا رنگ پیدا کیا جس نے نئی نسل کے سننے والوں میں کافی مقبولیت حاصل کی۔ جس کے بعد انہیں یونیورسٹی آف واشنگٹن کے علاوہ 40 مختلف ملکوں کی جانب سے دعوت بھی دی گئی۔نصرت فتح علی خان  16 اگست1997 کو جگر کے عارضے کے سبب لندن کےکرامویل اسپتال میں انتقال کرگئے۔

یہ خبر پڑھیئے

چین عالمی امن کا معمار رہے گا، سی آر آئی کا تبصرہ

چین کےصدر مملکت شی جن پھنگ نے پچیس اکتوبرکو اقوام متحدہ میں عوامی جمہوریہ چین کی قانونی نشست …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons