دنیا بھر میں کرونا وائرس کے کیسز کی تعداد 23 کروڑ 90 لاکھ سے متجاوز

دنیا بھر میں کرونا وائرس کے کیسز کی تعداد 23 کروڑ 90 لاکھ سے متجاوز

دنیا کا کوئی خطہ کرونا وائرس کی موذی وباء کی چوتھی لہر سے محفوظ نہیں، اس کے مریضوں اور اموات میں مسلسل اضافہ جاری ہے۔

دنیا بھر میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 23 کروڑ 90 لاکھ 51 ہزار 169 تک جا پہنچی ہے جبکہ اس موذی وائرس سے اموات 48 لاکھ 73 ہزار 249 ہو گئیں۔

کرونا وائرس کے دنیا بھر میں 1 کروڑ 78 لاکھ 72 ہزار 510 مریض اسپتالوں، قرنطینہ مراکز میں زیرِ علاج اور گھروں میں آئسولیشن میں ہیں، جن میں سے 81 ہزار 711 کی حالت تشویش ناک ہے جبکہ 21 کروڑ 63 لاکھ 5 ہزار 410 کرونا مریض صحتیاب ہو چکے ہیں۔

کرونا وائرس کے کیسز اور اس سے اموات کے اعتبار سے 10 سرِ فہرست ممالک میں 33 کروڑ سے زائد آبادی کا حامل امریکا تا حال پہلے نمبر پر ہے جہاں اس وائرس سے اب تک 7 لاکھ 34 ہزار 611 افراد موت کے منہ میں پہنچ چکے ہیں جبکہ اس سے بیمار ہونے والوں کی مجموعی تعداد 4 کروڑ 53 لاکھ 13 ہزار 353 ہو چکی ہے۔

1 ارب سے زائد آبادی والا ملک بھارت کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد کے حوالے سے دوسرے نمبر پر ہے، جہاں اس وائرس سے 4 لاکھ 50 ہزار 991 ہلاکتیں ہو چکی ہیں جبکہ اس سے متاثرہ 3 کروڑ 39 لاکھ 85 ہزار 920 مریض سامنے آ چکے ہیں۔

رونا وائرس کے مریضوں کی تعداد کے حوالے سے ممالک کی اس فہرست میں برازیل تیسرے نمبر پر ہے تاہم یہ اموات کے حوالے سے فہرست میں دوسرے نمبر پر ہے، جہاں اس جان لیوا وائرس سے 6 لاکھ 1 ہزار 266 ہلاکتیں ہو چکی ہیں جبکہ اس کے متاثرہ مریضوں کی تعداد 2 کروڑ 15 لاکھ 82 ہزار 738 ہو گئی۔

برطانیہ میں کرونا وائرس کے باعث اموات کی تعداد 1 لاکھ 37 ہزار 763 ہو گئی جبکہ کیسز کی تعداد 81 لاکھ 93 ہزار 769 ہو چکی ہے۔

کرونا وائرس سے روس میں کل اموات 2 لاکھ 17 ہزار 372 ہو گئیں، اس کے مریضوں کی تعداد 78 لاکھ 4 ہزار 774 ہو چکی ہے۔ ترکی میں کرونا وائرس سے اموات 66 ہزار 368 تک جا پہنچی ہیں جبکہ کیسز 74 لاکھ 75 ہزار 115 ہو چکے ہیں۔

فرانس میں کرونا وائرس کی وباء سے مجموعی اموات 1 لاکھ 17 ہزار 82 ہو چکی ہیں، جہاں اس کے اب تک کُل کیسز 70 لاکھ 57 ہزار 631 رپورٹ ہوئے ہیں۔

ایران میں کرونا وائرس سے کُل اموات کی تعداد 1 لاکھ 22 ہزار 868 ہو گئی جبکہ اس کے کل کیسز 57 لاکھ 16 ہزار 394 ہو گئے۔

ارجنٹینا میں کرونا وائرس کی وباء سے اموات 1 لاکھ 15 ہزار 491 ہو گئیں جبکہ اب تک اس کے 52 لاکھ 66 ہزار 275 مصدقہ متاثرین سامنے آئے ہیں۔

اسپین اس فہرست میں پھر 10 ویں نمبر پر پہنچ گیا ہے جہاں کرونا وائرس 86 ہزار 827 زندگیاں نگِل چکا ہے، جبکہ اب تک اس موذی وباء کے 49 لاکھ 77 ہزار 448 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

سعودی عرب اسی فہرست میں 53 ویں نمبر پر پہنچ چکا ہے جہاں کرونا وائرس سے اب تک کل اموات 8 ہزار 748 رپورٹ ہوئی ہیں جبکہ مملکت میں کرونا مریضوں کی تعداد 5 لاکھ 47 ہزار 649 تک جا پہنچی ہے۔

1 ارب 43 کروڑ سے زائد آبادی والے ملک چین میں کرونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آیا تھا، چین اس فہرست میں 112 نمبر پر پہنچ چکا ہے، جہاں کرونا مریضوں کی تعداد 96 ہزار 435 ہو چکی ہے جبکہ کُل ہلاکتوں کی تعداد کافی عرصے سے 4 ہزار 636 پر رکی ہوئی ہے۔

پاکستان میں کرونا وائرس کی چوتھی لہر کی شدت کم ہو رہی ہے، کرونا وائرس کے کیسز کے بعد اب اموات میں بھی کمی آنے لگی ہے، ملک کرونا مریضوں کے حوالے سے مرتب کی گئی فہرست میں 33 ویں نمبر پر آ گیا، جبکہ کرونا وائرس کی شرح ڈیڑھ فیصد کے قریب آ گئی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس کے مزید 689 کیسز سامنے آئے ہیں، مزید 18 افراد اس موذی وباء کے سامنے زندگی کی بازی ہار گئے، اس کے مزید 1 ہزار 180 مریض شفایاب ہو گئے، جبکہ مثبت کیسز کی شرح 1 اعشاریہ 62 فیصد پر آ گئی۔

پاکستان بھر میں کرونا وائرس کے اب تک 28 ہزار 152 مریض انتقال کر چکے ہیں جبکہ اس موذی وائرس کے کُل مریضوں کی تعداد 12 لاکھ 59 ہزار 648 ہو چکی ہے۔

ملک بھر میں اسپتالوں، قرنطینہ سینٹرز، وینٹی لیٹرز اور گھروں میں کرونا وائرس کے 41 ہزار 754 مریض زیرِ علاج ہیں، جن میں سے 2 ہزار 280 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے، جبکہ 11 لاکھ 89 ہزار 742 مریض اب تک اس بیماری سے شفایاب ہو چکے ہیں۔

گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک میں کرونا وائرس کے مزید 42 ہزار 476 ٹیسٹ کیئے گئے، جبکہ اب تک کُل 1 کروڑ 99 لاکھ 53 ہزار 497 کرونا ٹیسٹ کیئے جا چکے ہیں۔

پاکستان بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 9 لاکھ 41 ہزار 911 افراد کو کرونا وائرس کی ویکسین دی گئی، اب تک کُل 9 کروڑ 25 لاکھ 97 ہزار 193 کرونا ویکسین کی خوراکیں دی جاچکی ہیں جبکہ 3 کروڑ 42 لاکھ 99 ہزار 139 افراد کی مکمل ویکسینیشن ہو چکی ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

اصلاحات، کھلے پن اور اقتصادی تعمیر میں بڑی پیش رفت

چین کے صدر مملکت شی جن پھنگ نے پچیس اکتوبر کو اقوام متحدہ میں عوامی جمہوریہ چین کی …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons