چین سفارتی پالیسی میں پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے، چینی سفیر

پاکستان میں تعینات چینی سفیر نونگ رونگ نے کہاہے کہ چین اور پاکستان تمام موسموں کے اسٹرٹیجک شراکت دار دوست ممالک ہیں۔

جو بنیادی مفادات اور بڑے خدشات کے معاملات پر ایک دوسرے کے ساتھ مضبوطی سے کھڑے ہیں۔ اسلام آباد میں پاکستان اور چین کے 70 سالہ سفارتی تعلقات کے حوالے سے ایک یادگاری سکے کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ گذشتہ ستر سال کے دوران دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ دوستی بین الاقوامی تبدیلیوں کے تناظر میں ہرآزمائش پر پوری اُتری ہے، اور یہ دوستی ایک چٹان کی مانند مضبوط ہے۔

چینی سفیر نے کہا کہ چین اور پاکستان کے قیام کی سترویں سالگرہ کے موقع پر دونوں ممالک کی جانب سے ڈاک کی ٹکٹوں اور یادگاری سکوں کا اجرء چین اور پاکستان کے مابین مضبوط دوستی کی بھر پور عکاس ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ دوستی دونوں ممالک کا ایک قیمتی اسٹرٹیجک اثاثہ بن چکی ہے۔

چین سفارتی پالیسی میں پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے، چینی سفیر

اُن کا کہنا تھا کہ چینی صدر شی چن پھنگ اور وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں نئے عہد میں چین پاکستان ہم نصیب معاشرے کے بہتر مستقبل کیلئے مل کرکام کررہے ہیں۔ چینی سفیر نے کہا کہ گذشتہ چند سال کے دوران چین اور پاکستان کے درمیان معاشی تعاون سے دونوں ممالک کے مابین تجارتی اور سرمایہ کاری کی سرگرمیوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

نونگ رونگ نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری سے جہاں دونوں ممالک کے درمیان تجارتی روابط مستحکم ہوئے ہیں وہیں عوامی تبادلوں میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین پاکستان کی نہ صرف معاشی استحکام میں مدد کررہا ہے بلکہ فنانشیل ایکشن ٹاسک فورس جیسے عالمی فورمز پر بھی پاکستان کے مفادات کی مکمل حمایت کررہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین اپنی سفارتی پالیسی میں پاکستان کے ساتھ تعلقات کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔ چینی سفیر کا مزید کہنا تھا کہ سال 2021 چین اور پاکستان کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال کمیونسٹ پارٹی آف چائنہ اپنی قیام کی 100ویں سالگرہ منارہی ہے جبکہ چین جدید کاری کے نئے سفر کو آگے بڑھانے کے لئے 14ویں پانچ سالہ منصوبے پر عمل پیرا ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں نئی پاکستان کے تحت معاشی ترقی کے وژن نے چین اور پاکستان کے مابین دو طرفہ تعاون کی نئی راہیں کھولی ہیں۔

اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ دونوں ممالک کے عوام اور قیادت نے ان کے درمیان تعلقات کو ایک سدا بہار اسٹرٹیجک شراکت داری میں تبدیل کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین نے اہم مفادات کے معاملات پر ہمیشہ ایک دوسرے کی غیرمتزلزل حمایت کی ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہاکہ ابھرتے ہوئے عالمی اور علاقائی منظرنامے میں پاکستان نے اپنی ترجیحات کو علاقائی سیاست سے علاقائی معیشت میں تبدیل کیا ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ چین پاکستان تعلقات انتہائی منفرد ہیں جن کی دنیا میں مثال نہیں ملتی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ون چائنہ پالیسی کی مکمل حمایت کرتا ہے اور ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے، سنکیانگ ویغور خود اختیار علاقے، تائیوان، تبت اور جنوبی بحیرہ جنوبی چین پر چینی حکومت کے مؤقف کی بھرپور تائید کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین نے بھی عالمی فورمز پر کشمیر سے متعلق پاکستانی مؤقف کی بھر پور حمایت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کے پہلے مرحلے کی تکمیل کے بعد اس منصوبے کے دوسرے مرحلے کا آغاز ہوچکا ہے جس میں صنعتی زونز کی تعمیر، زرعی شعبے کی ترقی ؤ سمیت سماجی و معاشرتی شعبے کی ترقی پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ ایک خطہ ایک شاہراہ اقدام کے ذیلی منصوبے کے طور پر اقتصادی انضمام اور علاقائی روابط پر زور دیتے ہوئے پاکستان کی علاقائی معیشت کی جانب نئی کوششوں کی عکاسی کرتا ہے۔

واضح رہے کہ دونوں ممالک کے درمیان سفارتی تعلقات کے قیام کی سترویں سالگرہ کے موقع پر جاری کردہ یاد گاری سکے کی قیمت ستر روپے رکھی گئی ہے جو پاکستان اور چین کے درمیان 70 سالہ سدا بہار، آزمودہ اور برادرانہ تعلقات کی عکاس ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

لامحدود ماحول دوست توانائی کی جانب چین کی اہم پیش رفت

لامحدود ماحول دوست توانائی کی جانب چین کی اہم پیش رفت

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons