رفیع خاور المعروف ’ننھا‘ کو مداحوں سے بچھڑے آج 35 برس بیت گئے

رفیع خاور المعروف ’ننھا‘ کو مداحوں سے بچھڑے آج 35 برس بیت گئے

معروف اداکار رفیع خاور عرف ننھا کو اپنے مداحوں سے بچھڑے35 برس بیت گئے۔

دو عشروں تک اپنے لاکھوں پرستاروں کے دلوں پر راج کرنے والے ننھا کے گول مٹول چہرے پر معصومیت کھیلا کرتی تھی۔ وہ پردہ اسکرین پر آتے تو دیکھنے والے ہنستے ہنستے لوٹ پوٹ ہو جاتے۔ کامیڈی کے بے تاج بادشاہ ننھا آج ہم میں تو موجود نہیں مگران کا مزاح آج بھی زندہ ہے۔

اداکار ننھا کا اصل نام رفیع خاور تھا اور وہ 1942 میں ساہیوال میں پیدا ہوئے۔ ان کی شہرت کا آغاز ڈراما سیریز ‘الف نون’ سے ہوا۔ فلمی کیریئر کا آغاز 1966 میں ریلیز ہونے والی فلم ‘وطن کا سپاہی’ سے کیا لیکن ‘دبئی چلو’ کی کامیابی نے ننھا کو شہرت کی بلندیوں تک پہنچا دیا۔

ننھا کی دیگر یادگار فلموں میں ’سوہرا تے جوائی‘، ’سالا صاحب‘، ’نوکر تے مالک‘، ’نمک حلال‘، ’تیری میری اک مرضی‘، ’مہندی‘ اور دیگر قابل ذکر ہیں۔ ننھا کی ٹائٹل رول پر مشتمل فلم ‘سالا صاحب’ لاہور میں 300 ہفتے تک زیرِ نمائش رہی جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔

ننھا اور رنگیلا کی فلمی جوڑی کا خوب چرچا رہا، جبکہ ممتاز، انجمن، مسرت شاہین، رانی، دردانہ رحمان اور نازلی کے ساتھ ننھا کی اداکاری کو بھی خوب پسند کیا گیا۔

لوگوں میں خوشیاں بانٹنے والا یہ ہر دلعزیزکامیڈی کنگ 2 جون 1986ء کو اپنے لاکھوں پر ستاروں کو سوگوار چھوڑ گیا۔

یہ خبر پڑھیئے

اقوام متحدہ میں چین کے مؤثر کردار کی دنیا معترف ہے۔ سابق سفیر پاکستان مسعود خالد

چین میں تعینات پاکستان کے سابق سفیر مسعود خالد نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons