دنیا میں اسلامو فوبیا بڑھنے سے بین المذاہب نفرت کو ہوا ملتی ہے، وزیراعظم

دنیا میں اسلامو فوبیا بڑھنے سے بین المذاہب نفرت کو ہوا ملتی ہے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اسلامو فوبیا کے خاتمے کیلئے اجتماعی کاوشوں کی ضرورت ہے۔

او آئی سی ممالک کے سفیروں سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ تمام مسلمان ریاستوں کو مل کر کام کرنا ہوگا، دہشت گردی اور انتہا پسندی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔عمران خان نے کہا کہ دنیا میں اسلامو فوبیا پہلے سے بڑھ گیا ہے جس سے بین المذاہب نفرت کو ہوا ملتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ شدت پسندی کو اسلام کیساتھ جوڑنے سے مسلمان متاثر ہوتے ہیں، مغربی ممالک کی حکومتوں اور عوام کو اس معاملے پر ڈائیلاگ کی ضرورت ہے۔عمران خان نے تمام مذاہب کے افراد کی دل آزاری روکنے کیلئے قانونی اقدامات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ او آئی سی اسلام کے صحیح تشخص اور امن کے پیغام کو اجاگر کرے، پاکستان دنیا میں برداشت کے فروغ کیلئے عالمی برادری سے تعاون کیلئے پرعزم ہے ۔

یہ خبر پڑھیئے

40 سال سے کم عمر مرد و خواتین کو ایسٹرا زینکا ویکسین نہ لگانے کی ہدایات

برطانوی محکمہ صحت نے آکسفورڈ یونیورسٹی کی تیارکردہ کورونا ویکسین سے متعلق نئی ہدایات جاری …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons