تازہ ترین
بجلی کے بلوں میں اضافے کا بوجھ عوام پر نہیں ڈالا جائے گا، وزیراعظم

بجلی کے بلوں میں اضافے کا بوجھ عوام پر نہیں ڈالا جائے گا، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے بجلی کے زائد بلوں کا بوجھ صارفین پر نہ ڈالنے کے حکومتی عزم کا دوٹوک الفاظ میں اعادہ کیا ہے۔

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے آج اسلام آباد میں صحافیوں کو وفاقی کابینہ کے اجلاس سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ بجلی کی پیداوار اور ترسیل کے فرق کے باعث عوام پر بوجھ نہیں ڈالا جانا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ کابینہ کو بتایا گیا کہ سابقہ حکومت کے فیصلوں کے نتیجے میں بجلی کے نرخوں میں اضافہ ہوا۔ معاون خصوصی نے کہا کہ وزیراعظم نے وزارت توانائی کو ایک جامع نظام وضع کرنے کی ہدایت کی تاکہ نیلم جہلم سرچارج یا گردشی قرضے کے باعث قیمتوں میں اضافے کا بوجھ عام آدمی پر نہ پڑے۔ اس سلسلے میں جلد ہی اجلاس بلایا جائیگا۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کابینہ کو بتایا گیا کہ ملک میں بجلی کے پانچ سو فیڈرز بحال کئے گئے ہیں اور بجلی کی چوری روکنے کیلئے جدید ٹیکنالوجی استعمال کی جارہی ہے جبکہ 2019ء کے دوران بجلی چوروں کے خلاف 58 ہزار ایف آئی آرز درج کرائی گئی ہیں۔

وزارت توانائی نے وفاقی کابینہ کو بجلی کی فراہمی، گھریلو اور تجارتی صارفین کیلئے بجلی کی قیمتوں اور انہیں نیچے لانے کیلئے قلیل اور طویل مدت کے اہداف کے حوالے سے ایک تفصیلی منصوبہ پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے ملک میں کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے ہر ممکن اقدمات کرنے کی بھی ہدایت کی۔

کابینہ کو بتایا گیا کہ ابھی تک پاکستان میں کرونا وائرس کا ایک بھی مریض سامنے نہیں آیا۔ فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کابینہ نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ہمسایہ ملک بھارت کے دورے پر بھی غور کیا۔ کابینہ کو بتایا گیا کہ اس دورے میں بھارتی بیانیے کی شکست پاکستان کی کامیابی ہے۔

غربت کے خاتمے اور سماجی تحفظ کے بارے میں وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کابینہ کو احساس کفالت پروگرام، لنگر خانوں اور دیگر اقدامات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ جو معاشرے کے نادار طبقوں کو مدد فراہم کرنے کیلئے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا ویژن ہیں۔

وزیراعظم نے احساس پروگرام کے تحت سماجی فلاح وبہبود کے پروگراموں پر اطمینان ظاہر کیا۔ کابینہ کو اقتصادی اعدادوشمار اور اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی پر بریفنگ دی گئی۔ حکومت کی مؤثر نگرانی اور جامع پالیسیوں کی بدولت ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کے مختلف مافیاز کو ایک واضح پیغام ملا ہے جس کے نتیجے میں قیمتوں میں کمی ہوئی۔

وزیراعظم نے جسٹس فائز عیسیٰ کیس میں وزیر قانون ڈاکٹر فروغ نسیم کیلئے مکمل حمایت کا اظہار کیا اور ان کی خدمات کو سراہتے ہوئے انہیں یقین دلایا کہ حکومت آئینی اور قانونی دائرہ کار کے تحت ان کے اقدامات کی مکمل حمایت کرتی ہے۔ کابینہ نے بے نظیر بھٹو انٹرنیشنل ائیرپورٹ کے نواحی علاقوں میں بلند عمارتیں تعمیر کرنے کی منظوری دی۔

یہ بھی چیک کریں

سعودی حکومت کا حج معاہدے مؤخر کرنے پر زور

سعودی حکومت کا حج معاہدے مؤخر کرنے پر زور

سعودی عرب کی حکومت نے دنیا بھر کے ممالک پر زوردیاہے کہ وہ اس سال …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons