اُردو شاعر جوش ملیح آبادی کا 122واں یومِ پیدائش

اُردو شاعر جوش ملیح آبادی کا 122واں یومِ پیدائش

اُردو شاعری کے ولیم شیکسپیر جوش ملیح آبادی کا آج 122واں یومِ پیدائش منایا جارہا ہے۔

اردو ادب کے نامور اور قادر الکلام شاعر جوش ملیح آبادی کا اصل نام شبیر حسین خاں تھا۔ آپ 5 دسمبر 1898ء کو اتر پردیش ہندوستان کے مردم خیز علاقے ملیح آباد کے ایک علمی اور متمول گھرانے میں پیدا ہوئے۔ تقسیم ہند کے چند برسوں بعد ہجرت کر کے کراچی میں مستقل سکونت اختیار کر لی۔

جوش نہ صرف اپنی مادری زبان اردو میں ید طولیٰ رکھتے تھے بلکہ آپکو عربی، فارسی، ہندی اور انگریزی پر بھی عبور حاصل تھا۔ جوش کا ایک بڑا کارنامہ انکا مرثیہ حسین اور انقلاب ہے جس میں جوش نے مرثیہ کو نئے زاویے اور نئی سوچ عطا کی- حسین کو جوش نے ماتم کی علامت و استعارہ نہیں بنایا بلکہ انکے خیال میں شہادت امام عالی مقام نے اسلام اور انسانیت کو جو بلندی عطا کی ہے وہ سر بلندی ہی شہادت کا محاصل ہے۔

جوش نے کچھ یاد گار فلمی گیت بھی تحریر کئے- جوش نے آزادی کے جذبے سے سرشار اور اردو کی محبت میں کئی ترانے اور مضامین لکھے اور عوام الناس میں واقعتاً جوش بھر دیا جس کے لئے ان کو شاعر انقلاب بھی کہا جاتا ہے۔ اپنی اِسی خداداد لسانی صلاحیتوں کے وصف آپ نے قومی اردو لغت کی ترتیب و تالیف میں بھرپور علمی معاونت کی۔ ستر کی دہائی میں جوش صاحب کراچی سے اسلام آباد منتقل ہوگئے۔ 22 فروری 1982ء جوش صاحب نے 83 سال کی عمر میں اِس دار فانی سے کوچ کیا، اور اسلام آباد میں ہی پیوند خاک ہو گئے۔

Please follow and like us:

مزید پڑھیں

خطرناک ترین ممالک کی فہرست میں بھارت پانچویں نمبر پر آ گیا

خطرناک ترین ممالک کی فہرست میں بھارت پانچویں نمبر پر آ گیا

دنیا میں رہائش کے لیے خطرناک ترین ممالک کی فہرست میں بھارت پانچویں نمبر پر …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Facebook
Facebook
Twitter
Visit Us
YouTube
YouTube