پاک چین تعلقات افہام و تفہیم اور دوطرفہ تعاون پر مبنی ہیں، وزیر خارجہ

پاک چین تعلقات افہام و تفہیم اور دوطرفہ تعاون پر مبنی ہیں، وزیر خارجہ

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان ایک چین پالیسی کی بھرپور حمایت کرتا ہے، جبکہ چین نے پاکستان کی اسٹریٹجک، اقتصادی اور ترقیاتی ترجیحات میں پاکستان کا ساتھ دیا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ چین اور پاکستان کے تعلقات باہمی افہام و تفہیم ، اعتماد اور دوطرفہ تعاون پر مبنی ہیں۔ پاک چین سفارتی تعلقات کے قیام کی 70ویں سالگرہ کے موقع پر اسلام آباد اور بیجنگ میں بیک وقت بذریعہ ویڈیو لنک منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کے راہنماؤں اور عوام کی کئی نسلوں نے دوطرفہ تعلقات مستحکم بنانے میں بے مثال کردار ادا کیا ہے.

شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہم جانتے ہیں کہ تاریخ کے اس اہم دور  میں صدر شی چن پھنگ کی قیادت نے چینی عوام کی قومی خواہشات کی تکمیل میں انتہائی اہم  کردار ادا کیا ہے۔ آنجہانی چیئرمین ماؤ زے تونگ اور وزیر اعظم چَو این لائے سمیت دیگر اعلیٰ ترین چینی قیادت نے دونوں ممالک کے تعلقات مضبوط بنانے میں خصوصی کردار ادا کیا۔ اسی طرح ان راہنماؤں  کے بعد پاکستان اور چین کی آنیوالی نسلوں  اور عوام بھی گزشتہ 7 دہائیوں میں دونوں ممالک کے تعلقات مزید مضبوط بنانے میں پیش پیش رہے۔

اس موقع پر چینی ریاستی کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ اِی نے تقریب میں بیجنگ سے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 70 سال کے دوران پاک چین دوستی آزمائش کی ہر کسوٹی پر پوری اتری ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک چین دوستی کی تاریخ بہت طویل ہے، جیسا کہ چین کے آنجہانی وزیراعظم چو این لائی نے ایک بار کہا تھا کہ چین اور پاکستان کے عوام کے دوستانہ تبادلوں کے آغاز کا مشاہدہ تاریخی ادوار سے ہی کیا جاسکتا ہے۔

تقریب کے اختتام پر دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ کی جانب سے سفارتی تعلقات کی 70ویں کی مناسبت سے خصوصی لوگو بھی جاری کیا گیا۔

اس موقع پر پاکستان میں تعینات چینی سفیر نونگ رونگ، چینی سفارتخانے کے دیگر اعلیٰ عہدیداران، اعلی حکومتی اہلکار اور صحافیوں کی ایک بڑی تعداد بھی موجود تھی۔

یہ خبر پڑھیئے

ماہ رمضان کی خصوصی اِفطار ٹرانسمیشن “رحمتِ صیام”

ماہِ رمضان ۔ ۔ ۔ ماہِ نزولِ قرآن جس کی ہر ساعت رب کریم کی …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons