امریکی سیاستدانوں کی محض سیاسی مفادات کی دوڑ اور عوام غیر محفوظ، سی آر آئی کا تبصرہ

امریکی سیاستدانوں کی محض سیاسی مفادات کی دوڑ اور عوام غیر محفوظ، سی آر آئی کا تبصرہ

بائیس تاریخ کو امریکہ میں کووڈ۔19 کے باعث ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد پانچ لاکھ سے تجاوز کر گئی جبکہ موسم سرما میں برفانی طوفان کے باعث بھی 76 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

یہ دونوں اعدادوشمار اس بات کی عکاسی کرتے ہیں کہ امریکی عوام کو اس وقت دوہری آفات اور تباہی کا سامنا ہے۔ ان آفات سے نمٹنے میں ناکامی کی ایک اہم وجہ تو ملک میں سیاسی مفادات کو ترجیح دینا ہے جبکہ دوسری وجہ ملک میں بڑھتی ہوئی سیاسی پولرائزیشن کے سبب نظام کی ناکامی ہے۔

گزشتہ چند برسوں کے دوران، برسراقتدار امریکی طبقہ تو اس نہج پر پہنچ چکا ہے کہ جہاں اُس کی آراء اور مرضی سے اختلاف یا مخالفت کی کوئی گنجائش ہی نہیں۔ ملک میں دونوں سیاسی جماعتیں اقتدار کے لئے صف آراء نظر آتی ہیں اور کسی بھی مسئلے پر سیاست کی جاسکتی ہے۔

ایک جانب امریکی سیاسی اشرافیہ کو عوام کے جان و مال اور مفادات کی ہرگز کوئی پرواہ نہیں مگر دوسری جانب وہ سیاسی پولرائزیشن کو مزید بھڑکانے پر آمادہ نظر آتے ہیں۔ اس صورتحال میں گمان کیا جا سکتا ہے کہ بلا آخر امریکی عوام انہیں مسترد کر دیں گے۔

یہ خبر پڑھیئے

عالمی برادری کی امریکہ میں نسلی امتیاز اور نسل پرستی کے واقعات پر تشویش، سی آر آئی کا تبصرہ

تیئیس فروری کو امریکی گرینڈ جیوری نے اعلان کیا کہ پولیس تشدد سے ہلاک ہونے والے …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons