بھارتی جنگ بندی کی خلاف ورزی علاقائی امن کیلئے خطرہ ہے، دفتر خارجہ

بھارتی جنگ بندی کی خلاف ورزی علاقائی امن کیلئے خطرہ ہے، دفتر خارجہ

دفتر خارجہ نے 12 جنوری کو اسلام آباد میں بھارت کے ایک اعلی سفارتکار کو طلب کر کے کل کنٹرول لائن پر بھارتی قابض فورسز کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزیوں پر پاکستان کی جانب سے سخت احتجاج کیا جس کے نتیجے مین ایک دس سالہ لڑکا شدید زخمی ہوگیا۔

ایک بیان میں دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ چوہدری نے کہا کہ بھارتی فورسز کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پر شہری آبادی کو آرٹلری، مارٹر گولوں اور خودکار ہتھیاروں سے مسلسل نشانہ بنارہی ہیں۔

اس سال بھارت کی جانب سے 48 بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی گئی جس کے نتیجے میں 3 بے گناہ شہری شدید زخمی ہوئے۔ بیان میں بھارتی قابض فورسز کی جانب سے بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنانے کی افسوسناک کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ایسے بے رحمانہ اقدامات 2003 کے جنگ بندی معاہدے کی صریح خلاف ورزی ہیں اور مروجہ انسانی اقدار اور پیشہ ورانہ فوجی طرز عمل کے بھی خلاف ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ انسانی حقوق کی یہ سنگین خلاف ورزیاں کنٹرول لائن پر حالات کو کشیدہ بنانے کی بھارت کی مسلسل کوششوں کی عکاسی کرتی ہیں اور علاقائی امن اور سلامتی کیلئے خطرہ ہیں۔

بیان میں مزید کہا کہ کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پر کشیدگی پیدا کر کے بھارت غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے توجہ نہیں ہٹا سکتا۔

بھارتی حکومت پر زور دیا گیا کہ وہ 2003ء کے جنگ بندی معاہدے کا احترام کرے اور جنگ بندی کی دانستہ خلاف ورزی کے اس واقعے اور دیگر واقعات کی تحقیقات کرائے اور کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پر امن برقرار رکھے۔

بھارت پر یہ بھی زور دیا گیا کہ وہ بھارت اور پاکستان میں موجود اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق کردار ادا کرنے کی اجازت دے۔

یہ خبر پڑھیئے

پی ایس ایل 6: یونائیٹڈ نے گلیڈی ایٹرز کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا

پی ایس ایل 6: یونائیٹڈ نے گلیڈی ایٹرز کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا

اسلام آباد یونائیٹڈ نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو کراچی میں کھیلے گئے میچ میں 6 وکٹوں …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons