پاکستان، آذربائیجان اور ترکی کا باہمی دلچسپی کے امور میں دوطرفہ تعاون مذید مستحکم کرنے پر اتفاق

پاکستان، آذربائیجان اور ترکی کا باہمی دلچسپی کے امور میں دوطرفہ تعاون مذید مستحکم کرنے پر اتفاق

پاکستان، ترکی اور آذربائیجان کے وزرائے خارجہ کا دوسرا سہ فریقی اجلاس 13 جنوری کو اسلام آباد میں ہوگا جس میں عالمی علاقائی امور اور باہمی دلچسپی کے تمام شعبوں میں تعاون بڑھانے کے امکانات پر تبادلہ خیال کیا جائیگا۔

دفتر خارجہ کے مطابق پہلا سہ فریقی اجلاس نومبر 2017 میں Baku میں ہوا تھا۔ تینوں فریق علاقائی امن وسلامتی کو درپیش نئے اور ابھرتے ہوئے خطرات، کرونا کی وباء کے باعث پیدا ہونے والے چیلنجز سے نمٹنے، ماحول، موسمیاتی تبدیلی اور اقتصادی ترقیاتی اہداف کے حصول سمیت عالمی وعلاقائی امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

تینوں وزرائے خارجہ امن وسلامتی، تجارت اور سرمایہ کاری، سائنس وٹیکنالوجی، تعلیم اور ثقافتی تعاون سمیت باہمی دلچسپی کے تمام شعبوں میں سہ فریقی تعاون مزید بڑھانے کے امکانات بھی تلاش کریں گے۔

پاکستان، آذربائیجان اور ترکی کے درمیان مشترکہ مذہب، اقدار، ثقافت اور تاریخ پر مبنی برادرانہ تعلقات ہیں جو اعتماد اور ہم آہنگی کے رشتے میں جڑے ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

عالمی برادری کی امریکہ میں نسلی امتیاز اور نسل پرستی کے واقعات پر تشویش، سی آر آئی کا تبصرہ

تیئیس فروری کو امریکی گرینڈ جیوری نے اعلان کیا کہ پولیس تشدد سے ہلاک ہونے والے …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons