حکومت پسماندہ اور مستحق طبقے کو ہرممکن ریلیف فراہم کررہی ہے، ثانیہ نشتر

حکومت پسماندہ اور مستحق طبقے کو ہرممکن ریلیف فراہم کررہی ہے، ثانیہ نشتر

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے غربت خاتمہ ومعاشرتی تحفظ ڈویژن ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا ہے کہ حکومت پسماندہ اور مستحق طبقے کو احساس پروگرام کے تحت ریلیف فراہم کرنے کیلئے تمام وسائل مؤثر پیمانے پر بروئے کار لارہی ہے۔

سکندر ٹاؤن پشاور میں قومی سماجی ومعاشی سروے کے عمل کی نگرانی کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام کے تحت طلبہ کو مکمل سکالرشپ بھی دیا جارہا ہے۔

ثانیہ نشتر نے کہا کہ پاکستان میں پہلی مرتبہ جدید طرز پر مستحق خاندانوں کا ریکارڈ محفوظ کیا جارہا ہے تاکہ غیر مستحق افراد کسی مستحق خاندان کا استحصال نہ کرسکے۔

ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ خیبرپختونخوا قومی سماجی ومعاشی سروے کا آغاز اس سال ستمبر میں ہوا تھا جو اپریل 2021ء میں پائیہ تکمیل تک پہنچ جائیگا، سروے کے بنیاد پر حق دار اور حقیقی مستحق خاندانوں کا تعین کیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عوام احساس پروگرام ٹیموں کیساتھ بھرپور تعاون کر کے مستحق افراد کو ریلیف پہنچانے میں کردار ادا کریں۔ انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام کے تحت حاملہ خواتین کے علاج معالجے اور نومولود بچے کی نشونما کیلئے بھی احساس پروگرام کے تحت اقدامات کئے جارہے ہیں۔

ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ حاملہ خواتین کوسہ ماہی وظیفہ بھی دیا جارہا ہے جس میں لڑکیوں کیلئے 2 ہزارجبکہ لڑکوں کیلئے 1500 روپے سہ ماہی دیئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ احساس پروگرام کے تحت 100 اضلاع کی بجائے اب 150 اضلاع میں ہر مہینے چھوٹے کاروبار کیلئے 80 ہزار روپے دیئے جائیں گے۔

انہوں نے کہاکہ رواں سال ماہ دسمبر سے احساس تحفظ پروگرام کا باقاعدہ آغاز کیا جارہا ہے جو مستحق اور ضرورت مند افراد کو ریلیف دینے میں کافی مؤثر ثابت ہوگا اور مستحق افراد ایک موبائل میسج کے ذریعے اس سے استفادہ کرسکیں گے۔

قبل ازیں وزیراعظم کی معاون خصوصی نے پشاور کے ایک مقامی ہوٹل میں بینک الفلاح کیلئے احساس کفالت پروگرام ٹریننگ میٹریل کے حوالے سے ورکشاپ کا بھی دورہ کیا۔

یہ خبر پڑھیئے

ایران کو بہترین سفارت کاری کے ذریعے اپنا مؤقف عالمی برادری کے سامنے رکھنا چاہیئے، شفقت منیر

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons