اگر 95 فیصد لوگ بھی ماسک لگائیں تو لاک ڈاؤن کی ضرورت نہیں پڑے گی، عالمی ادارہ صحت

اگر 95 فیصد لوگ بھی ماسک لگائیں تو لاک ڈاؤن کی ضرورت نہیں پڑے گی، عالمی ادارہ صحت

عالمی ادارہ صحت کے ریجنل ڈائریکٹر برائے یورپ، ہانس کلُوگے کا کہنا ہے کہ اگر کسی ملک کے 95 فیصد عوام ماسک لگائیں تو لاک ڈاؤن کی ضرورت نہیں ہے۔

عالمی ادارہ صحت کے ریجنل ڈائریکٹر برائے یورپ کے مطابق یورپ میں لاک ڈاؤن سے بچا جا سکتا ہے اگر وہاں کے ایسے مقامات پر تقریباً ہر کوئی ماسک لگائے جہاں سماجی فاصلے برقرار رکھنا ممکن نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یورپ میں اس وقت 60 فیصد یا اس سے کم لوگ ماسک لگاتے ہیں اور اگر یہ شرح 95 فیصد تک پہنچ جائے تو لاک ڈاؤن کی ضرورت نہیں رہے گی۔تاہم انہوں نے متنبہ کیا کہ ماسک کے استعمال کا مطلب حتمی علاج ہرگز نہیں اور اس کے ساتھ دیگر اقدامات کو یکجا کی ضرورت ہے۔

یاد رہے کہ دنیا بھر میں نئے متاثرہ افراد کی تعداد پانچ کروڑ 75 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ ہلاکتیں 13 لاکھ 72 ہزار سے زیادہ ہو چکی ہیں۔

کورونا وائرس کی دوسری لہر اب یورپ سمیت کئی خطوں کو اپنی لپیٹ میں لے چکی ہے۔ وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک میں امریکا سرفہرست ہے، جہاں اب تک ایک کروڑ 19 لاکھ 11 ہزار افراد میں اس وائرس کی تشخیص ہو چکی ہے اور اس کے نتیجے میں 2 لاکھ 54 ہزار سے زیادہ افراد ہلاک بھی ہو چکے ہيں۔

اس فہرست میں بھارت 90 لاکھ 50 ہزار کورونا وائرس کیسز کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔ اس جنوبی ایشیائی ملک میں اب تک ایک لاکھ 33 ہزار کے قریب افراد اس وائرس سے ہلاک ہو چکے ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

رواں برس کا چوتھا اور آخری چاند گرہن آج ہوگا

رواں برس کا چوتھا اور آخری چاند گرہن آج ہوگا۔ کراچی یونیورسٹی اورانسٹی ٹیوٹ آف …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons