امریکی سینیٹرز کا بھارت کو بدترین ممالک میں شامل کرنے کا مطالبہ

امریکی سینیٹرز کا بھارت کو بدترین ممالک میں شامل کرنے کا مطالبہ

امریکہ کے 14 سینیٹرز نے وزیر خارجہ مائیک پومپو کے نام ارسال کردہ خط میں بھارت کو مذہبی آزادی کی فہرست میں بدترین ممالک میں شامل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

امریکی وزیر خارجہ کے نام خط 10 ری پبلکن اور 4 ڈیموکریٹ سینیٹرز نے ارسال کیا ہے جس میں امریکی حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ امریکی کمیشن برائے بین الاقوامی مذہبی آزادی کی سفارشات پر غور و خوض کرے۔

سینیٹر نے مزید کہا کہ کمیشن کی رپورٹ جو رواں سال اپریل میں بھارت کی مذہبی آزادی کے حوالے بنائی گئی، جس میں اسے بدترین ملکوں میں شامل کرنے کی تجویز دی تھی۔

امریکا میں مقیم بھارتی اور مقامی انسانی حقوق کی تنظیموں نے سینیٹرز کے خط کا خیر مقدم کیا ہے اور مطالبہ کیا کہ وہ بھارتی حکومتی ایجنسیوں اور مذہبی ظلم و ستم ڈھانے والے بھارتی سرکاری اہلکاروں پر بھی پابندی لگائے۔

یہ خبر پڑھیئے

اسرائیل غیر قانونی قید خانے بند اور ان میں موجود فلسطینیوں کو رہا کرے، اقوام متحدہ

مقبوضہ فلسطین میں اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے رپورٹر مائیکل لنک نے مطالبہ کیا …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons