سی پیک: پاکستان میں متعدد منصوبے باقاعدہ منظوری کے بعد تعمیری مراحل میں ہیں، چینی سفیر

سی پیک: پاکستان میں متعدد منصوبے باقاعدہ منظوری کے بعد تعمیری مراحل میں ہیں، چینی سفیر

پاکستان میں تعینات چینی سفیر یاؤ چنگ نے کہا ہے کہ سی پیک کے تحت پاکستان میں متعدد منصوبے باقاعدہ منظوری کے بعد تعمیر کے مراحل میں ہیں۔

اسلام آباد میں سی پیک کے حوالے سے بذریعہ ویڈیو لنک منعقدہ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے چینی سفیر یاؤ چنگ نے کہا ہے کہ سی پیک کے تحت پاکستان میں متعدد منصوبے باقاعدہ منظوری کے بعد تعمیر کے مراحل میں ہیں، جن میں 2 ہائیڈل منصوبوں کوہالہ اور آزاد پتن کے علاوہ کراچی تا پشاور ریلوے لائن ایم ایل ون خاص طور پر قابل ذکر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ چین گزشتہ کچھ عرصے سے نوول کرونا وائرس کی وباء سے نبرد آزما ہے، جبکہ چینی حکومت اور عوام پاکستان کے انتہائی شکرگزار ہیں جس نے وباء کے ابتدائی دنوں میں چین کو بھرپور مدد فراہم کی۔

یاؤ چنگ نے کہا کہ نوول کرونا وائرس کی وباء دنیا میں متعدد تبدیلیوں کی وجہ بن چکی ہے، جن میں سرفہرست موجودہ عالمی اقتصادی صورتحال ہے۔ چینی سفیر نے کہا کہ چین نے اپنی معیشت بحال کرنے کیلئے سخت محنت کی ہے، جیسا کہ پاکستانی حکومت بھی اس وقت ملک کی اقتصادی صورتحال میں بہتری کیلئے متعدد اقدامات اٹھا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایسی صورتحال میں پاکستانی معیشت میں بہتری کیلئے سی پیک کے اہم منصوبوں پر پیشرفت جاری رکھی جائے۔

چینی سفیر یاؤ چنگ نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے تعمیراتی شعبے پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے، جو معیشت کی بحالی میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے، جبکہ سی پیک کے زیر تعمیر منصوبے اس ضمن میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں، کیونکہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کا بنیادی مقصد مشترکہ فوائد کا حصول ہے۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک کے دوسرے مرحلے کے تحت چین سماجی شعبے میں بہتری کیلئے مزید وسائل فراہم کرے گا، تاکہ پاکستان کی اقتصادی صورتحال میں بہتری اور طبی سہولیات کے تحت حالیہ وباء سے نمٹنے میں بھرپور معاونت فراہم کی جاسکے، جبکہ پاکستان میں حملہ آور ہونیوالے ٹڈی دل سے نمٹنے کیلئے چین کی جانب سے کراچی میں خصوصی لیبارٹری کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے۔

چینی سفیر نے کہا کہ سی پیک کے تحت پاکستان کو صنعت، زراعت اور سائنس و ٹیکنالوجی کے شعبے میں بھرپور معاونت فراہم کی جارہی ہے۔  انہوں نے کہا کہ پاکستان میں پانی کی فراہمی کے مسائل حل کرنے کیلئے بھی متعدد منصوبوں پر کام جاری ہے۔

چینی سفیر یاؤ چنگ نے کہا کہ سی پیک سے نہ صرف پاکستان بلکہ افغانستان سمیت خطے کے دیگر ممالک بھی فائدہ اٹھا سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ چینی حکومت اور سرمایہ کاروں کی جانب سے پاکستان کے ساتھ متعدد شعبوں میں تعاون جاری رہے گا، جو کھلے پن اور مشترکہ فوائد کے حصول کی ایک عمدہ مثال ہے۔

یہ بھی چیک کریں

جنرل اسمبلی کے نو منتخب صدر 2 روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچ گئے

جنرل اسمبلی کے نو منتخب صدر 2 روزہ دورے پر اسلام آباد پہنچ گئے

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے نئے منتخب صدر Volkan Bozkir پاکستان کے دو روزہ …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons