ہانگ کانگ سے متعلق قومی سلامتی کی قانون سازی، ہانگ کانگ کے طویل مدتی استحکام اور خوشحالی کو یقینی بنائے گی

ہانگ کانگ سے متعلق قومی سلامتی کی قانون سازی، ہانگ کانگ کے طویل مدتی استحکام اور خوشحالی کو یقینی بنائے گی

 ہانگ کانگ کی مادر وطن کو واپسی کی تیئیسویں سالگرہ کی آمد  کے موقع پر ہانگ کانگ کے مختلف حلقوں نے مختلف انداز میں سرگرمیوں کا اہتمام کیا۔

انہوں نے چائنا میڈیا گروپ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ہانگ کانگ کی مادر وطن کو  واپسی کے بعد سے ، “ایک ملک ، دو نظام” کا عمل کامیاب رہا ہے۔ ہانگ کانگ سے متعلق  قومی سلامتی کی قانون سازی ہانگ کانگ کے طویل مدتی استحکام اور خوشحالی کو یقینی بنائے گی ۔

ہانگ کانگ کی گوانگ شی ایسوسی ایشن نے انتیس جون کو قومی سلامتی کے قانون اور ایک ملک دونظام کی حمایت میں جلسے کا اہتمام کیا۔  اس ایسوسی ایشن کے سربراہ چھائی جیا زان کا کہنا ہے کہ ہانگ کانگ سے متعلق قومی سلامتی کی قانون سازی بہت اہم ہے۔ یہ ہانگ کانگ کو بچانے اور اس کا تحفظ کرنے کا قانون ہے –

انہوں نے اس قانون کی بھر پور حمایت کا اظہار کیا ۔ جبکہ ہانگ کانگ کولون سوسائٹیز فیڈریشن کی چیئرپرسن وانگ ہوئی جن  نے کہا کہ ہانگ کانگ کی مادر وطن کو واپسی کے بعد سے “ایک ملک ، دو نظام” کا عمل کامیاب رہا ہے ، اور  قومی سلامتی کا  قانون “ایک ملک ، دو نظام” کے استحکام کے لئے مضبوط مدد فراہم کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہر لحاظ سے دیکھا جائے تو ہانگ کانگ کی معاشی ترقی ،عوام کا معیار زندگی اور آزادی و کھلا پن سب واپسی سے پہلے  کے دور سے زیادہ بہتر  ہے ۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ ” ایک ملک دو نظام ” ہانگ کانگ کی حقیقی ضروریات سے مطابقت رکھتا ہے اور یہ ہانگ کانگ کے لیے بہترین نظام ہے ۔

یہ بھی چیک کریں

پاکستان اپنے ہمسایہ ممالک کیساتھ پُرامن بقائے باہمی پر یقین رکھتا ہے، وزیراعظم

پاکستان اپنے ہمسایہ ممالک کیساتھ پُرامن بقائے باہمی پر یقین رکھتا ہے، وزیراعظم

پاکستان اپنے ہمسایہ ممالک کے ساتھ پرامن بقائے باہمی پر یقین رکھتا ہے تاہم ہم …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons