تائیوان کو علیحدہ کرنے کی کوشش ناکام ہو گی

تائیوان کو علیحدہ کرنے کی کوشش ناکام ہو گی

انتیس مئی کو بیجنگ کےعظیم عوامی ہال میں “علیحدگی پسندی کے خلاف قانون”کے نفاذ کے پندرہ سال مکمل ہونے کے موقع پر ایک سیمینار منعقد ہوا۔

چینی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے سیاسی بیورو کے مستقل نمائندے اور قومی عوامی کانگریس کے صدر، لی چان شو نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تائیوان کو علیحدہ کرنے کی بھرپور مخالفت کرتے ہوئے وطن کی پرامن وحدت کے لیے بھر پور کوشش کی جائے گی۔

بیجنگ یونین یونیورسٹی کے تائیوان ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے نائب صدر لی جن گوانگ نے ذرائع ابلاغ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ گزشتہ کچھ عرصے سے”تائیوان کی علیحدگی پسند قوتوں” نے صورتحال کے بارے میں غلط اندازہ لگایا اور اشتعال انگیزی کو جاری رکھا۔ اس کی وجہ سے آبنائے تائیوان کے دونوں کناروں کے ہم وطنوں اور چینی قوم کے بنیادی مفادات نیز آبنائے تائیوان کے امن و استحکام کو شدید نقصان پہنچا۔ ہم چین کے اقتدار اعلی اور علاقائی سالمیت کے تحفظ کے لیے تائیوان کی علیحدگی پسند قوتوں کی سرگرمیوں کو روکنے کی بھرپور کوشش کریں گے ۔

یاد رہے کہ ” علیحدگی پسندی کے خلاف قانون ” چودہ مارچ دو ہزار پانچ کو نافذ کیا گیا تھا۔ یہ آئین کے مطابق ایک جائز قانون ہے اور اس کا اطلاق صرف تائیوان کے معاملے پر ہی ہوتا ہے۔اس قانون کو جاری کرنے کا مقصد تائیوان کی علیحدگی کی مخالفت کرنا ہے ۔

یہ بھی چیک کریں

چینی وزیراعظم کا اصلاحات کے عمل کو تیز کرنے پر زور

چینی وزیراعظم کا اصلاحات کے عمل کو تیز کرنے پر زور

چینی وزیراعظم لی کھ چھیانگ نے اقتصادی بنیادی اصولوں کو مستحکم رکھنے کے لئے اصلاحات …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons