تازہ ترین
کرونا وائرس کی سنگینی کے باوجود امریکی سیاستدان بدستور افواہیں پھیلانے میں مصروف، سی آر آئی کا تبصرہ

کرونا وائرس کی سنگینی کے باوجود امریکی سیاستدان بدستور افواہیں پھیلانے میں مصروف، سی آر آئی کا تبصرہ

دو اپریل کو چین کی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چھون اینگ نے رسمی پریس کانفرنس میں کہا کہ  “اس لمحے سیاستدانوں کو عوام کی جانی سیکورٹی اور صحت کو اولین ترجیح دینی چاہیئے۔

” انہوں نے امریکہ کے سیاستدانوں کی جانب سے چین کے خلاف افواہوں اور الزامات کو مسترد کر دیا۔  انہوں نے بلوم برگ کے سوال کے جواب میں دس منٹ تک سلسلہ وار حقائق پیش کر کے ان افواہوں اور الزامات کو بے بنیاد قرار دیا۔

کیا حقیقت میں ، چین نے  کچھ  چھپایا ہے؟ اس بات کے فیصلے کیلئے سب سے اہل عالمی ادارہ صحت اور متعلقہ ماہرین ہیں۔ چین میں ڈبلیو ایچ او کے نمائندے گاڈن گالیا پہلے ہی نشاندہی کر چکے ہیں کہ چین نے ڈبلیو ایچ او کے ساتھ متعلقہ معلومات کا بروقت اشتراک کیا جس کی بنیاد پر ڈبلیو ایچ او نے وبا کا درست تجزیہ کیا اور پوری دنیا کو انسداد وبا کیلئے خبردار کیا۔

سوال یہ ہے کہ بروقت خبرداری اور آگاہی کے باوجود امریکی حکومت نے کیا کیا؟

امریکی ڈاکٹر ہیلن وائی چو نے جنوری میں ہی وبا کے حوالے سے خبردار کیا تھا سوال یہ ہے کہ  ان کو ٹیسٹنگ ختم کرنے اور منہ بند رکھنے کا حکم  کیوں دیا گیا؟ امریکہ کے امراض کی روک تھام  مرکز  نے دو مارچ سے ٹیسٹنگ اور اموات سے متعلق تعداد بتانا کیوں بند کیا ؟ امریکہ کے ہسپتال کو مشتبہ مریضوں کی تشخیص کے لیے وزارت صحت سے کیوں درخواست کرنی پڑی؟

امریکی سیاستدانوں کے پاس مذکورہ سوالات میں سے شاید ایک کا بھی جواب نہیں ہے۔  آخر میں سوال یہی پیدا ہوتا ہے کہ وبا سے متعلق حقائق کس نے چھپائے ؟ یہ بات اب بالکل واضح ہوگئی ہے کہ اپنی نااہلی اور خوف کو چھپانے کیلئے چین پر بے بنیاد الزامات لگائے جا رہے ہیں۔

امریکی ویب سائٹ ڈیلی بیسٹ کی ایک رپورٹ کے مطابق وائٹ ہاؤس نے دیگر وفاقی اداروں کے ساتھ مل کر چین پر “وبا چھپانے” اور “عالمی وبا پھیلانے” کا الزام عائد کرنے کا خفیہ پروگرام بنایا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وائٹ ہاؤس اپنی نااہلی کو چھپانے کے لیے چین کو “قربانی کا بکرا” بنانا چاہتا ہے۔ اپنے سیاسی مقاصد کے حصول کے لیے عوام کی جان کے تحفظ کو بھی نظر انداز کیا جا رہا ہے اور وبا سے لڑنے کا دوسرا اہم موقع بھی ضائع کیا جا رہا ہے۔

یہ بھی چیک کریں

پاکستان بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہے،معید یوسف

پاکستان بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہے،معید یوسف

قومی سلامتی کے بارے میں وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر معید یوسف نے کہا ہے …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons