تازہ ترین
کرونا وائرس کی روک تھام: چین اپنے تجربات کا دنیا کے ساتھ بھر پورانداز میں اشتراک کر رہا ہے

کرونا وائرس کی روک تھام: چین اپنے تجربات کا دنیا کے ساتھ بھر پورانداز میں اشتراک کر رہا ہے

دو اپریل کو چین کی ریاستی کونسل کی وبا کے مشترکہ کنٹرول میکانزم کی منعقدہ پریس کانفرنس سے اطلاع ملی ہے کہ چین وبا کی روک تھام کے حوالے سے دنیا کے ساتھ اپنے تجربات کا بھر پورانداز میں اشتراک کر رہا ہے اور عالمی تعاون میں مثبت طور پر شریک ہو رہا ہے۔

چین کے قومی صحت عامہ کمیشن کے افسر لی مینگ زو نے پریس کانفرنس میں کہا کہ چین کے قومی صحت عامہ کمیشن نے وبا کی روک تھام کے لیےجی 20 گروپ کے معلومات کے مشترکہ اشتراک، پالیسی اور علمی سطح پر کوارڈینیشن کو فروغ دینے کے فیصلے کی حمایت کی ہے۔چین جی 20 گروپ کے وزرائے صحت عامہ کی کانفرنس کی تیاریوں میں مصروف ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ چین ادویات اور ویکسین کی تحقیق سے متعلق عالمی تعاون میں بھی مثبت طور پر حصہ لے رہا ہے۔

چین نے ویڈیولنک کے ذریعے مختلف ممالک کے ساتھ وبا کی روک تھام سے متعلق تجربات کا تبادلہ کیا ہے ۔ انہوں نےکہا کہ وبا کی روک تھام کے حوالے سے عالمی تعاون کے لیے چین نے ماہرین کی ایک ٹیم بنائی ہے۔ ان ماہرین نے ایک سو سے زائد ممالک اور علاقوں کے ساتھ ویڈیولنک کے ذریعے چالیس سے زائد مرتبہ تبادلہ خیال کیا ہے اور وبا کی روک تھام سے متعلق چین کے تجربات کا ان کے ساتھ بھر پور انداز میں اشتراک کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں مزید ایسی بیس سے زیادہ ویڈیو میٹںگز کا اہتمام کیا جائے گا۔

اطلاع کے مطابق چین کے قومی صحت عامہ کمیشن صحت عامہ کے ہنگامی نیٹ ورک کو مزید مضبوط بنانےکیلئے کوششیں جاری رکھے گا تاکہ مزید بہتر انداز میں مختلف ممالک کے ساتھ پالیسیوں کو کوآرڈینٹ کیا جاسکے اور معلومات کا اشتراک کیا جاسکے۔

یہ بھی چیک کریں

پاکستان بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہے،معید یوسف

پاکستان بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے تیار ہے،معید یوسف

قومی سلامتی کے بارے میں وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر معید یوسف نے کہا ہے …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons