اقوام متحدہ کی وبائی صورتحال کے تناظر میں دنیا بھر میں مسلح تنازعات کے خاتمے کی اپیل

اقوام متحدہ کی وبائی صورتحال کے تناظر میں دنیا بھر میں مسلح تنازعات کے خاتمے کی اپیل

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوئترس نے تمام ممالک سے اپیل کی ہے کہ انسانیت کے مشترکہ دشمن نوول کورونا وائرس کی موجودہ صورتحال کے پیش نظر تمام مسلح تنازعات کو فی الفور ختم کیا جائے اور ایک حقیقی جنگ پر توجہ مرکوز کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کے مختلف علاقوں میں خواتین، بچے، جسمانی معذوری کے شکار افراد اور بے گھر لوگ مسلح تصادم کا شکار ہیں۔ ایسے افراد ممکنہ طور پر نوول کورونا وائرس کا بھی شکار بن جائیں گے۔ اس وقت جنگ بندی سے امدادی اقدامات کی راہ ہموار کی جائے۔

پچیس مارچ کو گوئترس نے ایک مرتبہ پھر یمن میں برسرپیکار مختلف فریقوں سے جنگ بندی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سیاسی طور پر معاملات حل کیے جائیں اور یمن کو کووڈ-۱۹ کی وبا سے بچانے کی کوشش کی جائے۔

سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی فوج کے ترجمان ترکی المالکی نے پچیس مارچ کو کہا کہ اتحادی فوج یمن میں ممکنہ طور پر پھوٹنے والی کووڈ-۱۹ کی وبا سے نمٹنے کے لیے یمن کی سرکاری فورسز کی جانب سے جامع جنگ بندی پر عمل درآمد کی حمایت کرتی ہے۔

امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر نے بیرونی ممالک میں تعینات امریکی فوجی دستوں کی سفری اور آپریشنل سرگرمیاں بند کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں۔ فرانس کی وزارت دفاع کے مطابق وبائی صورتحال کے پیش نظر چھبیس مارچ سے عراق میں تعینات فرانسیسی دستوں کے انخلا کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

امریکی سینیٹرز کا بھارت کو بدترین ممالک میں شامل کرنے کا مطالبہ

امریکی سینیٹرز کا بھارت کو بدترین ممالک میں شامل کرنے کا مطالبہ

امریکہ کے 14 سینیٹرز نے وزیر خارجہ مائیک پومپو کے نام ارسال کردہ خط میں …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons