blank

کراچی میں کرونا وائرس کا مشتبہ مریض تیزی سے روبہ صحت، والد کا اظہار اطمینان

کراچی کے نجی اسپتال میں زیر علاج نوول کرونا وائرس کا مشتبہ مریض 22 سالہ یحیٰ جعفری تیزی سے صحتیاب ہورہا ہے۔

ایف ایم 98 کے پروگرام ہمقدم میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے یحیٰ جعفری کے والد آلِ جعفری نے بتایا کہ انکے صاحبزادے کا علاج تاحال جاری ہے، تاہم ان کی حالت اب خطرے سے باہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹرز کے مطابق وائرس یحیٰ جعفری  پر زیادہ اثر انداز نہیں ہوسکا، اسلئے انہیں آئندہ 48 گھنٹوں تک طبی نگرانی میں رکھا جائے گا، تاکہ مزید کسی بھی قسم کا شبہ دور کیا جاسکے۔

آلِ جعفری کے مطابق ایران سے آنے کے 5 دن بعد یحیٰ جعفری نے بتایا کہ ایران میں قیام کے دوران بھی انکی طبیت خراب رہی، جسکے پیش نظر کراچی پہنچنے پر نجی اسپتال میں انکے ٹیسٹ کئے گئےجو ابتدائی طور پر نیگٹیو آئے۔ انہوں نے کہا کہ ہوائی اڈے پر سکریننگ کے دوران یحیٰ جعفری کے جسم کا درجہ حرارت معمول کے مطابق تھا، تاہم کچھ روز کے بعد انہوں نے سینے میں تکلیف اور چکر آنے کی شکایت کی۔

آلِ جعفری نے مزید بتایا کہ انہیں اسپتال میں زیر علاج اپنے صاحبزادے سے ملاقات کی اجازت نہیں ہے، تاہم ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ اب ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گھر کے دیگر افراد اور یحیٰ جعفری کے ساتھ ایران جانیوالے تمام دوستوں کے ٹیسٹ نیگٹیو آئے ہیں اور اسپتال نے انہیں مکمل طور پر تندرست قرار دیا ہے۔ اس موقع پر آلِ جعفری نے بتایا کہ ان کے صاحبزادے اپنی صحت اور صفائی کا ہمیشہ خیال رکھتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ وائرس سے متاثر ہونے کے باوجود اب وہ تیزی سے روبہ صحت ہیں۔

یہ بھی چیک کریں

آئی ایم ایف کی مالی سال 2021 میں پاکستان کی معیشت کی بحالی کی پیشگوئی

آئی ایم ایف کی مالی سال 2021 میں پاکستان کی معیشت کی بحالی کی پیشگوئی

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ نے مالی سال دوہزار اکیس کےدوران پاکستان کی معیشت میں بحالی …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons