blank

سونیاگاندھی نے شہریت ترمیمی قانون کو تفرقہ انگیز قانون قراردیا

بھارت میں کانگریس کی سربراہ سونیاگاندھی نے شہریت ترمیمی قانون کوامتیازی اورتفرقہ انگیز قانون قراردیاہے۔

دہلی میں ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سونیا گاندھی نے کہا کہ اس قانون کا قبیح مقصد بھارتی عوام کو مذہبی خطوط پر تقسیم کرنا ہے۔ انہوں نے شہریت کے ترمیمی قانون کوفوری طور پر واپس لینے اور آبادی کا قومی اندراج روکنے کا مطالبہ کیا۔ اس سے پہلے ممتابنرجی سمیت مختلف صوبوں کے متعدد وزرائے اعلیٰ نے شہریت ترمیمی قانون پر عملدرآمد یا اپنے صوبوں کے شہریوں کے اندراج سے انکار کر دیا ہے۔

یہ بھی چیک کریں

ٹک ٹاک نامی معروف چینی ایپ کو خفیہ آلہ قرار دینا، امریکی بالادستی پر مبنی سوچ: سی آر آئی کا تبصرہ

ٹک ٹاک نامی معروف چینی ایپ کو خفیہ آلہ قرار دینا، امریکی بالادستی پر مبنی سوچ: سی آر آئی کا تبصرہ

حالیہ دنوں یہ خبریں سامنے آ رہی ہیں کہ امریکہ معروف چینی ایپ “ٹک ٹاک” …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons