ہانگ کانگ میں واقعات کا مقصد خصوصی انتظامی علاقے کی حکومت کو ختم کرنا ہے،

ہانگ کانگ میں واقعات کا مقصد خصوصی انتظامی علاقے کی حکومت کو ختم کرنا ہے،

ہانگ کانگ میں چین کی وزارت خارجہ کے خصوصی کمشنر شیے فونگ نے پندرہ اگست کو ہانگ کانگ میں ہونے والے بین الاقوامی قانون فورم دو ہزار انیس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہانگ کانگ کی موجودہ صورتحال کا مقصد انسانی حقوق، آزادی اور جمہوریت کی بقاء نہیں بلکہ ہانگ کانگ حکومت کے مخالف افراد اور انتہائی متشدد عناصر کے ذریعے تشدد اور دوسرے غیر قانونی طریقوں سے ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کی حکومت کو ختم کرنے کی کوشش ہے۔

شیے فونگ نے اپنے خطاب میں کہا کہ اقتدار اعلی کی برابری اور اندرونی معاملات میں عدم مداخلت بین الاقوامی قانون اور بین الاقوامی تعلقات کے بنیادی اصول ہیں۔ حال ہی میں بہت کم ممالک اور اداروں نے ہانگ کانگ کے امور اور چین کے اندرونی معاملات میں مداخلت کر کے بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہانگ کانگ کا بنیادی قانون ” ایک ملک دو نظام ” کا قانونی اظہار ہے۔ ایک ملک کی بنیاد پر مرکزی حکومت ہانگ کانگ کے نظام کا احترام کرتی ہے اور اس کا مؤقف بہت واضح ہے کہ ہانگ کانگ کو اعلی سطح پر خود اختیاری حاصل ہے جس میں کوئی تبدیلی نہیں آئے گی۔ لیکن ہانگ ہانگ کی موجودہ صورتحال ایسی ہے کہ حکومت مخالف افراد اور متشدد عناصر ہانگ کانگ کی قانونی حکومت کو ختم کرنے، مرکزی حکومت کے اختیارات کا مقابلہ کرنے اور ” ایک ملک دو نظام ” کی بنیاد کو منسوخ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

علاوہ ازیں بیرونی قوتیں بین الاقوامی قوانین و ضوابط اور بین الاقوامی تعلقات کے بنیادی اصولوں کو پامال کرتے ہوئے ہانگ کانگ کے امور اور چین کے اندرونی معاملات میں مداخلت کر رہی ہیں جس کا مقصد ہانگ کانگ کو اپنے مفاد کے حصول کے لئے استعمال کرتے ہوئے چینی قوم کی عظیم نشاۃ ثانیہ کے احیا کے راستے میں رکاوٹ ڈالنا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں