پاکستانی طلبہ نے مصنوعی جلد تیار کر لی

پاکستانی طالبعلموں نے مصنوعی جلد تیار کر لی

پاکستانی طلبہ نے مصنوعی جلد تیار کرنے کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے۔ مصنوعی جلد جھلس کر متاثر ہونے والوں کے لیے تیار کی گئی ہے-

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے سائنس و ٹیکنالوجی کا اجلاس سینیٹر مشتاق احمد کی زیر صدارت ہوا۔ ریکٹر کامسیٹس یونیورسٹی نے قائمہ کمیٹی کو بتایا کہ کامسیٹس نے مصنوعی جلد بنانے کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے، مصنوعی جلد جھلس کر متاثر ہونے والوں کے لیے تیار کی گئی ہے۔ ریکٹر کامسیٹس نے بتایا کہ ہمارے ایک طالبعلم نے ایک پٹی بنائی ہے جس سے ذیابیطس کا علاج کیا جا سکتا ہے، کامسیٹس حکام نے بتایا کہ مصنوعی جلد 22 ڈالر فی اسکوائر انچ کے حساب سے امریکا سے منگوائی جاتی ہے، مصنوعی جلد کی تیاری پر 22 سینٹ فی اسکوائر انچ لاگت آئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں