وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور راہداری کا باضابطہ افتتاح کر دیا

وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور راہداری کا باضابطہ افتتاح کر دیا

وزیر اعظم عمران خان نے کرتارپورراہداری کا باضابطہ افتتاح کردیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور راہداری کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کہ سکھ برادری کو بابا گرونانک کی 550 ویں سالگرہ کی مبارکباد دیتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے مابین بنیادی مسئلہ کشمیر کا ہے۔ کشمیر کا تنازعہ حل ہونے سے پورا برصغیر ترقی کے راستے پر گامزن ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ یہ محض زمین کا معاملہ نہیں بلکہ انسانیت کا مسئلہ ہے ، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں جاری ہیں۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ دیکھ رہا ہوں کہ 70 سال سے اس مسئلے کے حل نہ ہونے کی وجہ سے دونوں مملک کے درمیان نفرتوں میں اضافہ ہو ہے- انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ مسئلہ کشمیر کے حل ہونے سے خطے میں پائیدار امن قائم ہو گا-
وزیراعظم نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کیلئے یہ پیغام ہے کہ معاشرے میں انصاف سے امن اور ناانصافی سے انتشار پھیلتا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے بابا گرو نانک دیو جی کی 550ویں سالگرہ پر تمام سکھ برادری کو مبارکباد دی اور انہیں کرتار پور آمد پر خوش آمدید کہا۔ انہوں نے کہا کہ اسلام ہمیں انصاف اور روادری کا درس دیتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ باباگرو نانک نے بھی انسانیت، انصاف اور رواداری کا درس دیا۔

اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ امن ، محبت اور خیر سگالی کی راہداری ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا آج حکومت پاکستان کی طرف سے بین المذاہب ہم آہنگی کے فروغ کیلئے کئے گئے اقدامات کو سراہا رہی ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ اس تاریخی دن کا سہرا وزیراعظم عمران خان کے سر ہے جنہوں نے اسلامی تعلیمات اور قائداعظم محمد علی جناح کے وژن کے مطابق اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کی بات کی ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت نے 400 گردواروں کی نشاندہی کی ہے جن کی تزئین وآرائش کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بابا گرونانک نے محبت، ہم آہنگی ، انسانیت کے احترام کا درس دیا اور صوفی بزرگوں نے بھی اسی پیغام کی تلقین کی۔ انہوں نے کہا کہ امن کے اس پیغام کو مقبوضہ کشمیر تک پہنچنا چاہئے جہاں لوگوں کو ان کے گھروں تک محدود کر دیا گیا ہے اور انہیں نماز جمعہ کی ادائیگی کی اجازت بھی نہیں ہے۔

کرتارپورراہداری کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نور الحق قادری نے کہا کہ تقسیم ہند کے بعد آج اس راہداری کا افتتاح محبت اور رواداری کی سب سے بڑی مثال ہے۔

کرتاپور راہداری کی افتتاحی تقریب میں سابق بھارتی وزیراعظم من موہن سنگھ نے بھی شرکت کی اور وزیراعظم عمران خان کے ساتھ مصافحہ کیا- اس موقع پر انہوں نے پاکستان کی جانب سے کرپوراہداری کی تعمیر کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا، من موہن سنگھ نے کہا کہ راہداری سے دونوں ممالک کے مابین دو طرفہ تعلقات میں بہتری لانے میں مدد حاصل ہوگی۔

بھارتی سابق کرکٹر اور سیاستدان نوجوت سنگھ سدھ نے تقریب سے اپنے خطاب میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا کرتار پور راہداری کھولنے کا اقدام تاریخ میں سنہرے الفاظ میں لکھا جائے گا۔ سدھو نے کہا کہ عمران خان نے دنیا بھر کے چودہ کروڑ سکھوں کے دل جیت لئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سکندر اعظم نے دہشت پھیلا کر دنیا کو تسخیر کیا جبکہ عمران خان نے محبت سے یہ سب کچھ کیا۔ انہوں نے وزیراعظم عمران خان کی شخصیت کی شاعرانہ کلام کے ذریعے تعریف کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں