وزیراعظم نے سرحدی علاقوں میں سمگلنگ روکنے کیلئے مرکزی ڈیٹا بیس کے قیام کی منظوری دیدی

وزیراعظم نے سرحدی علاقوں میں سمگلنگ روکنے کیلئے مرکزی ڈیٹا بیس کے قیام کی منظوری دیدی

وزیراعظم عمران خان نے بلوچستان اور خیبرپختونخوا کے سرحدی علاقوں میں سمگلنگ کو روکنے کیلئے مرکزی ڈیٹا بیس قائم کرنے کی منظوری دی ہے۔

اطلاعات و نشریات کے بارے میں معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے آج اسلام آباد میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی صدارت میں سمگلنگ اورغیرقانونی تجارت کی حوصلہ شکنی کرنے کیلئے ایک اعلی سطح کا اجلاس ہوا۔ معاون خصوصی نے کہا کسٹمز انٹیلی جنس ، فیڈرل بورڈ آف ریونیو ، وفاقی تحقیقاتی ادارے ، انٹیلی جنس بیورو اور دیگر خفیہ اداروں کے تعاون سے ایک مرکزی ڈیٹا بیس قائم کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اجلاس میں کسٹمز اتھارٹی اور آٹو میشن متعارف کرانے کا فیصلہ کیا گیا۔ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیراعظم نے خیبرپختونخوا کے جوانوں کو اکنامک سپورٹ سسٹم میں لانے کیلئے ایک مؤثر حکمت عملی تیار کرنے کی بھی ہدایت کی۔ انہوں نے کہا کہ سرحدی علاقوں کے اضلاع میں اقتصادی زونز قائم کیے جائیںگے اور ان علاقوں کو ٹیکس فری قرار دیکر سرمایہ کاروں کو سہولت فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بلوجستان کے جوانوں کو ہنر سکھائے جائیںگے اور مزدوروں کو متبادل آمدن کیلئے قطر بھیجا جائے گا۔

ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ قومی لائحہ عمل تمام سیاسی جماعتوں نے ملکر تیارکیا تھا اور اس کے تحت امن وامان برقراررکھنا ریاست کی اولین ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی ایک خود مختار ادارہ ہے اور یہ قومی لائحہ عمل میں دئیے گئے رہنما اصولوں کی روشنی میں عمل درآمد کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں