گلوکارہ نازیہ حسن کو مداحوں سے بچھڑے 19 برس بیت گئے

گلوکارہ نازیہ حسن کو مداحوں سے بچھڑے 19 برس بیت گئے

برصغیر میں پاپ میوزک انڈسٹری کو نئی جہت فراہم کرنے والی پاکستان کی مایہ ناز گلوکارہ نازیہ حسن کو اپنے مداحوں سے بچھڑے 19 برس بیت گئے لیکن اپنے مداحوں کے دلوں میں وہ آج بھی زندہ ہیں۔

بالی ووڈ بھی مرحومہ کے گیتوں کا دیوانہ ہے۔ 1975ء میں گلوکاری کی دُنیا میں قدم رکھنے والی نازیہ حسن نے کیریئر کا آغاز پی ٹی وی کے پروگرام ” کلیوں کی مالا ” سے کیا- نازیہ حسن کی پہلی البم ” ڈسکو دیوانے” 1982 میں دُنیا بھر میں ریلیز کی گئی۔ جو جلد ہی 14 ممالک میں مقبول ہونے کے بعد ایشیاء کی سب سے زیادہ فروخت ہونے والی البم کا اعزاز حاصل کر گئی۔ 1965ء میں پیدا ہونے والی گلوکارہ نے کئی مشہور گیت گائے۔ جو آج بھی زبان زدعام ہیں۔ ان کے مقبول گیتوں میں “دوستی، ڈسکو دیوانے، آنکھیں ملانے والے، بوم بوم اور دل لگی شامل ہیں۔

نازیہ حسن کی شخصیت اپنے اندر اتنی دلکشی سمیٹے ہوئے تھی کہ ان کے ہر گیت اور ہر ادا نے لوگوں کو اپنی گرفت میں لے لیا، نازیہ کا پہلا البم ’’ڈسکو دیوانے‘‘ 1982ء میں ریلیز ہوا۔ جس نے کامیابی کے نئے ریکارڈ قائم کیے، اس البم میں ان کے بھائی زوہیب حسن نے بھی اپنی آواز کا جادو جگایا تھا۔

نازیہ حسن پہلی پاکستانی گلوکارہ ہیں، جنہوں نے فلم فیئر ایوارڈ حاصل کیا اور بیسٹ فیمیل پلے بیک سنگر کی کیٹیگری میں ایوارڈ جیتنے والی کم عمر ترین گلوکارہ قرار پائیں، یہ اعزاز آج تک ان کے پاس ہے۔ کینسر کے موذی مرض میں مبتلا نازیہ حسن 13 اگست 2000ء کو لندن کے ایک اسپتال میں صرف 35 برس کی عمر میں انتقال کر گئی تھیں-

اپنا تبصرہ بھیجیں